پیرا ڈائز لیکس میں سابق وزیر اعظم شوکت عزیز کا بھی نام

اسلام آباد: پنامہ دستاویزات کے بعد پیرا ڈائز دستاویزات افشا ہونے سے پاکستان کی سیاست میں اس وقت زبردست تہلکہ مچ گیا جب متعدد اہم پاکستانی شخصیات میں سابق وزیر اعظم شوکت عزیز کا بھی نام آیا۔
ایک ٹرسٹ میں سٹی بینک کی جانب سے ڈائریکٹر کے طور پر بھی ان کا نام سامنے آیا ہے۔تحقیقات صحافیوں کے عالمی کنسورشیم (آئی سی آئی جے) کی جاری کردہ فہرست میں شوکت عزیز کے حوالے سے بتایا گیا ہے کہ ریٹائرڈ جنرل پرویز مشرف کے دور اقتدار مین پاکستان کے وزیر خزانہ اور پھر وزیر اعظم مقرر کیے جانے سے پہلے شوکت عزیز سٹی بینک کے ڈائریکٹرتھے۔
وہ بینک کے دیگر ایکزیکٹیوزکی مانند بھاماس میں 1997 تا1999سٹی ٹرسٹ لمیٹڈ کے ڈائریکٹروں میں سے ایک تھے اور اس میں ان کے حصص بھی تھے ۔
شوکت عزیز نے1999میں انٹارکٹک ٹرسٹ کے نام سے دوسرا ٹرسٹ خود بنایا۔ ان کی اہلیہ اور بچے ٹرسٹ کے بینی فشری بنے۔یہ ٹرسٹ امریکہ کے شہرڈیلاویر میں قائم کیا گیا تھا۔دستاویزات کے مطابق وزیر خزانہ بننے سے کچھ پہلے شوکت عزیز نے ڈیلاویر میں ٹرسٹ قائم کیا جسے برمودا سے چلایا جارہا تھا۔

Title: former pm shaukat aziz among 135 pakistanis named in paradise papers | In Category: پاکستان  ( pakistan )

Leave a Reply