افغان سرحد پار سے تین پاکستانی چوکیوں پر دہشت گردانہ حملہ، پانچ فوجی ہلاک

اسلام آباد :پاکستان اور افغانستان کی سرحد کے قریب گذشتہ شب تین چیک پوسٹوں پر سرحد پار سے دہشت گردانہ حملوں میں پاکستانی فوج کے پانچ جوان ہلاک ہو گئے لیکن پاکستانی فوج کی جانب سے بھی اتنی ہی تیزی کے ساتھ کی گئی جوابی کارروائی میں دس سے زائد مشتبہ انتہا پسند مارے گئے۔ ہلاک فوجیوں کی شناخت نائیک ثناءاللہ،نائیک صفدر، سپاہی الطاف، سپاہی نیک محمد اور سپاہی انور کے طور پر کی گئی ہے۔
لیکن پاکستانی فوج نے انٹر سروس پبلک ریلیشن(آئی ایس پی آر)کے مطابق سرحد پر دہشت گردانہ حملے میں فوجی جوانوں کی ہلاکت پر فوجی سربراہ قمر جاوید باجوا نے افسوس کا اظہار کرتے ہوئے مہمند ایجنسی میں اس انتہاپسندانہ حملے کا پاکستانی فوج کی جانب سے منھ توڑ جواب دیے جانے پر فوج کی ستائش کی اورکہا کہ دہشت گرد مشترکہ خطرہ ہیں، سرحد پر ان کی آزادنہ نقل و حرکت کو روکنے کے لیے ضروری ہے کہ افغان سرحد کے اس پار بھی اتنی ہی فوج تعینات ہو جتنی پاکستان کی سرحد کے اندرتعینات ہے ۔ ڈان نیوز نے ذرائع کے حوالے سے بتایا کہ ترجمان دفتر خارجہ کا کہنا تھا کہ پاکستان کی جانب سے بارہا توجہ دلانے کے باوجود افغانستان میں دہشت گردوں کے خلاف کارروائی نہیں کی گئی۔
حملے کے بعد پاکستان میں تعینات افغانستان کے نائب سفیر عبدالناصر یوسفی کو دفتر خارجہ طلب کرکے شدید احتجاج کیا گیا۔ریڈیو پاکستان کی رپورٹ کے مطابق دفتر خارجہ کی جانب سے جاری ہونے والے بیان میں کہا گیا کہ پاکستان نے دہشت گردی کے لیے افغان سرزمین استعمال ہونے پر افغانستان کے نائب سفیر کے سامنے احتجاج کیا۔ فوجی سربراہ نے پاک۔افغان سرحد پر جوانوں کی موجودگی کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ سرحدی سلامتی اورمؤثر کارروائی کے لیے نوجوانوں کی سرحد پرموجودگی ضروری ہے۔ دریں اثناوزیر اعظم میاں محمد نواز شریف نے دہشت گرد حملے میں جاں بحق ہونے والے اہلکاروں کی ہلاکت پر افسوس کا اظہار کیا ہے۔

Read all Latest pakistan news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from pakistan and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Five soldiers killed in militant attack along pak afghan border ispr in Urdu | In Category: پاکستان Pakistan Urdu News

Leave a Reply