احمدیوں کی عبادت گاہ پر حملے کے بعد چکوال کے گاؤں دلمیال میں خوف وہراس

چکوال:یہاں سے 35کلومیٹر کی دوری پر واقع دلمیال گاؤں میں ایک روز قبل احمدیوں کی ایک عبادت گاہ پر مشتعل بھیڑ کے حملے کے دوسرے روز بھی خوف و ہراس کا ماحول رہا۔مشتعل بھیڑ نے احمدیوں کی عبدات گاہ پر قبضہ کر لیا اور وہاں رکھی مذہبی کتابوں، پنکھوں، قالینوں ، صفوں اور کئی دیگر اشیاءکو نذر آتش کر دیا۔
مسجد میں اس وقت موجود ایک65سالہ شخص ملک خالد جاویددل کا دورہ پڑنے سے ہلاک ہو گیا اور ایک 27سالہ لڑکا نعیم شفیق جو احمدی فرقہ سے تعلق نہیں رکھتا تھا،حملہ کے دوران گولی لگنے سے ہلاک ہو گیا۔ ایک اورا غیر احمدی شخص کو گولی لگی لیکن اس کی حالت خطرے سے باہر بتائی جاتی ہے۔پیر کو فوج اور ریجرز کی آمد تک دن بھر صورت حال کشیدہ رہی۔
نعیم شفیق کو تترال سے چار کلو میٹر کے فاصلہ پر واقع اس کے آبائی گاؤں تترال کاہون میں دفن کیا گیا ۔ سوشل میڈیا پر اس کی موت پر اسے شہید قرار دیا جارہا ہے۔صوبائی وزیر ملک تنویر ،قومی اسمبلی کے رکن طاہر اقبال، صوبائی ممبر اسمبلی ذوالفقار علی خان ، علاقائی پولس افسر اور راولپنڈی ڈویژن کے کمشنر بھی گاؤں پہنچ گئے۔واضح رہے کہ گاؤں میں تقریباً500احمدی رہائش پذیرہیں گاؤں والوں نے 1860میں یہ مسجد تعمیر کی تھی۔

Read all Latest pakistan news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from pakistan and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Fear stalks chakwal after attack on ahmadi place of worship in Urdu | In Category: پاکستان Pakistan Urdu News

Leave a Reply