موقع پر موجود کسی نے بھی چیف جسٹس کے بیٹے کو نقاب پوش بندوق برداروں سے بچانے کی کوشش نہیں کی:عینی شاہدین

کراچی:پیر کی سہ پہر میں اغوا کیے جانے والے سندھ ہائی کورٹ کے چیف جسٹس کے بیٹے اویس شاہ کا ابھی تک کوئی سراغ نہیں مل سکا ہے ۔اسی دوران ابتدائی تحقیقات سے انکشاف ہوا ہے کہ جس وقت کچھ نقاب پوش کلفٹن سوپر اسٹور پر اویس شاہ کا اغوا کر رہے تھے تو اسٹور کے گارڈ زسمیت وہاں موجود کوئی شخص اویس کا بچانے آگے نہیں بڑھا۔
ایک بوڑھے سیکورٹی گارڈ کے مطابق مسٹر شاہ جیسے ہی ایک چھوٹے شاپنگ بیگ کے ساتھ مارکٹ سے باہر نکلے کلاشنکوف لیے 4 مسلح افراد جنہوں نے اپنے چہرے سیاہ کپڑے سے ڈھانپ رکھے تھے نمودار ہوئے اور شاہ کو دبو چ لیا۔
سیکورٹی گارڈ نے مزید بتایا کہ شاہ مدد کے لیے چیخے ۔لیکن ان میں سے ایک نقاب پوش نے ان کے منھ پر گھونسے برسانا شروع کر دیے جبکہ باقی نقاب پوشوں نے ان کے ہاتھوں کو جکڑ رکھا تھا۔
پارکنگ اور اس کے اطراف زبردست بھیڑ بھاڑ تھی کوئی اویس کی مدد کو نہیں آیا ۔اس گارڈ نے کہ کہ یہ کچھ ایسی سرعت سے ہوا کہ وہ چاہتے ہوئے بھی نہ خود کچھ کر سکا اور نہ ہی کسی کو مدد کے لیے آواز لگا سکا۔ان لوگوں کے ہاتھوں میں کلاشمکوف تھیں اور ایسا محسوس ہو رہا تھا کہ اگر کوئی بھی ان کے آڑے آیا تو وہ اسے بے دریغ گولی مار دیںگے۔
عینی شاہدین نے کہا کہ اغوا کنندگان کو اویس شاہ کو قابو کرکے کار میں ڈال کر فرار ہونے میں پانچ منٹ بھی نہیں لگے۔اس دوران اویس شاہ مدد کے لیے چیختا رہا لین سبھی بے حس و حرکت کھڑے اسے اغوا ہوتے دیکھتے رہے۔اور اغوا کنندگان اویس کو سفید کورولا میں ڈال کر فرار ہو گئے۔

Read all Latest pakistan news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from pakistan and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Eyewitness recalls nobody helped awais as gunmen snatched him from car park in Urdu | In Category: پاکستان Pakistan Urdu News

Leave a Reply