پاکستان میں 8سالہ بچی کو ریپ کے بعد زندہ جلادیا گیا

لاہور: صوبہ پنجاب کے ساہیوال ضلع کی تحصیل چیچہ وطنی میں جس8سالہ بچی کو ریپ کے بعد زندہ جلا دیا گیا تھا لاہور کے یک اسپتال میں چل بسی۔علاقہ کے رہائشیوں اور متوفیہ کے رشتہ داروں نے اس بہیمانہ واردات کے خلاف احتجاج میں زبردست مظاہرہ کیا اور پوری تحصیل میں مکمل ہڑتال کی گئی۔
بچی کے جنازے میں جس میں سیکڑوں لوگ شامل تھے ”ظالموں خون کا حساب دو“نعرے لگائے جا رہے تھے۔جنازے کے دوران احتجاجیوں نے بچی کے قاتلوں کا پھانسی دینے کا مطالبہ کیا۔تفصیلات کے مطابق چیچہ وطنی تحصیل کے گاؤں محمد آباد کی دوسری جماعت کی طالبہ نور فاطمہ ایک دکان سے ٹافیاں خریدنے نکلی تھی لیکن واپس نہیں آئی۔
اسکے گھر والوں نے جب اس کی تلاش کی تو تین گھنٹے کی تلاش کے بعد وہ 90فیصد جلی ہوئی بیہوشی کے عالم میں پڑی ملی۔اسے ایک قریبی اسپتال ے جایا گیا جہاں سے اسے جناح اسپتال ریفر کر دیا گیا۔لیکن وہ زخموں کی تاب نہ لا کر دم توڑ گئی۔ پوسٹمارٹم سے تصدیق ہو گئی کہ بچی کو جلانے سے پہلے جنسی زیادتی کا شکار بنایا گیا تھا۔

Title: eight year old girl burnt to death after rape in chichawatni | In Category: پاکستان  ( pakistan )

Leave a Reply