چیف جسٹس ثاقب نثار نے میمو گیٹ اسکینڈل مقدمہ میں خارجہ و داخلہ سیکریٹریوں کو طلب کر لیا

اسلام آباد: پاکستان کے ایک سابق سفیر متعین امریکہ سے ایک فوج مخالف میمو موصول ہونے کے ایک پاک نژاد امریکی تاجر کے دعوے سے میمو گیٹ اسکینڈل کے طور پر پکارے جانے والے 6سال پرانے معاملہ کی پاکستان کی سپریم کورٹ نے سماعت شروع کر دی۔
جمعرا ت کوسماعت کے پہلے روز چیف جسٹس ثاقب نثار نے وفاقی تحقیقاتی ایجنسی کے ڈائریکٹر جنرل ، وزارت داخلہ و خارجہ کے سکریٹریوں کو طلب کر لیا۔یہ میمو گیٹ اسکینڈل 2011میں اس وقت منظر عام پر آیا تھا جب ایک پاکستانی نژاد امریکی تاجر منصور اعجاز نے دعویٰ کیا کہ انہیں اس وقت کے پاکستانی سفیر متعین امریکہ حسین حقانی نے ایک ’فوج مخالف‘ میمو بھیجا ہے کہ امریکی جوائنٹ چیف چیرمین ایڈمرل مائیک مولن کو دے دیا جائے۔
معاملہ کی سماعت شروع کرتے ہی چیف جسٹس نے حکومت کے سینیئر افسران کو طلب کر کے کہا کہ وہ عدالت کو مطلع کریں کہ حقانی کو پاکستان واپس لانے کے لیے انہوں نے کیا اقدامات کیے ہیں۔چیف جسٹس نثار نے سینیئر ایڈوکیٹ اکرمشیخ سے پوچھاکہ وہ کمرہ عدالت میں کیا کر رہے ہیں جس کے جواب میں شیخ جی نے کہا کہ وہ اس کیس کے واحد گواہ اعجاز کی پیروی کر رہے ہیں۔
تاہم عدالت نے کہا کہ فی الحال عدالت اس معاملہ میں اعجاز کے رول پر بات نہیں کر رہی۔یہ کہتے ہوئے کہ عدالت سب سے پہلے تو اس پورے معاملہ کو سمجھنا چاہتی ہے ،چیف جسٹس نے کہا کہ مختصر وقفہ کے بعد عدالت اس کیس کی سماعت جاری رکھے گی۔ اس بنچ میں جسٹس اعجاز احسان اور جسٹس عمر عطا بندیال بھی ہیں۔

Read all Latest pakistan news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from pakistan and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Cjp summons dg fia interior and foreign secretaries in memogate case in Urdu | In Category: پاکستان Pakistan Urdu News

Leave a Reply