افغان و بنگلہ دیشی پناہ گزینوں کو شہریت دینے کے عمران خان کے اعلان سے عوام کا اظہار ناخوشی

پشاور: خیبر پختون خوا کے تاجروں اور دکانداروں نے ملک میں دسیوں سال سے مقیم افغان شہریوں کو پاکستانی شہریت دینے کے وزیر اعظم عمران خان کے اعلان کو مسترد کر دیا اور انتباہ دیا کہ اگر حکومت نے ایسا کوئی قدم اٹھایا تو وہ ٹیکسوں اور یوٹیلیٹی بلوں کی ادائیگی روک دیں گے۔

علیحدہ بیانات میں آل پاکستان کمرشیل ایکسپورٹرس ایسوسی ایشن کے چیرمین عبد الجلیل، پشاور چیمبر آف اسمال ٹریڈرز اینڈ اسلام انڈسٹریز کے سینیئر نائب صدر حاجی معمور خان اور مرکز تبظیم تاجران خیبر پختون خوا کے صدر ملک مہر الٰہی نے وزیر اعظم کو تلقین کی کہ افغانوں اور بنگالیوں کو شہریت دینے کا اپنا ارادہ یا فیصلہ واپس لے لیں کیونکہ اس سے تاجروں اور صنعتکاروں میں بددلی اور زبردست بے چینی و اضطراب پھیلے گا۔

مسٹر جلیل نے کہا کہ ملک میں تقریباً40لاکھ افغان ہیں اور وہخیبر پختون خوا میں رہائش پذیر ہیں۔جہاں مختلف کاروباروں پر ان کا مکمل قبضہ ہے۔یہ افغان شہری کسی قسم کا کوئی ٹیکس ادا نہیں کرتے اور ان کی یہ عادت بن گئی ہے کہ جب بھی ٹیکس چوروں کے خلاف ٹیکس جمع کرنے والے ادارے یا فیڈرل بورڈ آف ریوینیو افسران حرکت میں آتے ہیں یہ اپنے ملک بھاگ کھڑے ہوتے ہیں۔

Read all Latest pakistan news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from pakistan and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Citizenship for afghans bengalis opposed in Urdu | In Category: پاکستان Pakistan Urdu News

Leave a Reply