پاکستان میں مردم شماری موخر کرنے کا فیصلہ

اسلام آباد : مشترکہ مفادات کی کونسل(سی سی آئی) کے اجلاس میں فیصلہ کیا گیا ہے کہ ضرب عضب کے عنوان سے جاری فوجی کارروائی ختم ہونے تک پاکستان میں مردم شماری کا عمل موخر کر دیا جائے۔یہ فیصلہ پیر کو وزیرِ اعظم پاکستان نواز شریف کی صدارت میں منعقدہ مشترکہ مفادات کونسل کے اجلاس میں کیا گیا۔اس سلسلے میں وزیرِ اعظم ہاو¿س سے جاری ہونے والے مختصر بیان میں کہا گیا ہے کہ مردم شماری کی نئی تاریخ کا اعلان تمام متعلقہ اداروں سے صلاح و مشورے کے بعد کیا جائے گا۔بیان کے مطابق ملک میں جاری سکیورٹی آپریشنز اور فوج کی مصروفیات کی وجہ سے مقررہ تاریخ پر مردم شماری کرانا ممکن نہیں ہوگا۔خیال رہے کہ پاکستان کی حکومت نے گذشتہ سال یہ اعلان کیا تھا کہ مارچ 2016 میں ملک میں مردم شماری اور خانہ شماری فوج کی نگرانی میں کروائی جائے گی۔اس سے قبل ملک میں پانچ مرتبہ آبادی کا تخمینہ لگانے کے لیے مردم شماری کرائی جا چکی ہے۔ پاکستان میں آخری بارمردم شماری 1998 میں ہوئی تھی۔پاکستان کے صوبہ بلوچستان میں بعض بلوچ قوم پرست جماعتوں کی جانب سے پہلے ہی مجوزہ مردم شماری پر تحفظات کا اظہار کیا جا چکا ہے۔رقبے کے اعتبار سے ملک کے سب سے بڑے صوبے میں بعض بلوچ اور پشتون قوم پرست جماعتوں کے درمیان یہ بات ہمیشہ متنازع رہی ہے کہ بلوچستان میں کون اکثریت میں ہے۔ماضی میں جو مردم شماریاں ہوئیں انھیں پشتون قوم پرستوں نے تسلیم نہیں کیا جبکہ اس مرتبہ بلوچ قوم پرست جماعتوں کا کہنا ہے کہ سازگار حالات کے بغیر مردم شماری ہوئی تو وہ اسے تسلیم نہیں کریں گے۔

Read all Latest pakistan news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from pakistan and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Census postponed in pakistan in Urdu | In Category: پاکستان Pakistan Urdu News

Leave a Reply