پاسپورٹ عدالت میں جمع ہے اس لیے نواز شریف کے ساتھ لندن نہیں جا سکتی: مریم نواز

اسلام آباد: پاکستان مسلم لیگ نواز (پی ایم ایل این) کی نائب صدر اور سابق وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف کی بیٹی مریم نواز نے کہا ہے کہ یہ میرے لیے بڑا تکلیف دہ ہے کہ میرے والد علاج کے لیے بیرون ملک جائیں اور میں ان کے ہمراہ نہیں جا سکتی ۔

تاہم انہوں نے یہ بھی کہا کہ اگر ان کی صحت کے لیے بیرون ملک جانا ضروری ہوا تو انہیں یقیناً جانا چاہئے۔لیکن میرا ان کے ساتھ نہ جانا میرے لیے بڑا پریشان کن ہو گا۔

انہوں نے چودھری شوگر ملز کیس میں لاہور کی ایک احتساب عدالت میں پیش ہونے کے بعد مر کہا کہ چونکہ ان کا پاسپورٹ عدالت میں جمع ہے اس لیے وہ فی الحال اپنے والد کے ساتھ نہیں جا سکتیں ۔لیکن انہوں نے یہ ضرور کہا کہ ان کے چچا و پی ایم ایل این صدر شہباز شریف سابق وزیر اعظم کو بیرون ملک لےجانے کا بندوبست کر رہے ہیں۔

واضح ہو کہ جمعرات کو شریف خاندان کے ایک ذریعہ نے بتایا تھا کہ نواز علاج کے لیے لندن جانے پر راضی ہو گئے ہیں۔

بتایا جاتا ہے کہ جب ڈاکٹروں نواز شریف سے دو ٹوک لہجہ میں یہ کہہ دیا کہ وہ پہلے ہی پاکستان میں دستیاب تما م طبی تدابیر کرکے ہار گئے ہیں اور کسی دوا نے کوئی کام نہیں کیا اس لیے اب آخری چارہ بیرون ملک جا کر علاج کرانے کا ہی بچا ہے تو نواز شریف لندن جانے پر راضی ہو گئے۔

کہا جاتا ہے کہ اگر ایکزٹ کنٹرول لسٹ سے نواز کا نام حذف کر دیا جاتا ہے تو وہ اسی ہفتہ لندن روانہ ہو جائیں گے۔

Read all Latest pakistan news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from pakistan and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Cant accompany nawaz abroad as passport is with court says maryam in Urdu | In Category: پاکستان Pakistan Urdu News
What do you think? Write Your Comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.