پاکستان میں غیر مسلم جوڑے کوزندہ جلانے کے جرم میں امام مسجد سمیت5کو سزائے موت

اسلام آباد: پاکستان کوٹ رادھا کشن میں2014میں ایک مسیحی جوڑے شمع اور شہزاد کو زندہ جلا دینے کے انسانیت سوزمعاملے میں جرم ثابت ہونے پر انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت نے ایک اما م مسجد سمیت پانچ ملزمان کو سزائے موت سنا دی۔انسداد دہشت گردی کی عدالت میں مقدمے کی سماعت ہوئی اور جرم ثابت ہونے پر عدالت نے پانچ ملزمان کو سزائے موت اور دو دو لاکھ روپے جرمانے کی سزا سنادی۔
واضح رہے کہ سپریم کورٹ آف پاکستان نے اس دلدوز سانحے کا ازخود نوٹس لیا تھا اور وفاقی حکومت کو جامع رپورٹ جمع کرانے کا حکم دیا تھا۔ پاکستانی روزنامہ ڈاان کے مطابق سزائے موت پانے والوں میں مہدی خان، ریاض کمبوہ، عرفان شکور،محمد حنیف اور امام مسجد حافظ اشتیاق شامل ہیں۔ عدالت نے جرم میں شریک دیگر 8 ملزمان محمد حسین، نور الحسن، محمد ارسلان، محمد حارث، محمد منیر، محمد رمضان، عرفان اور حافظ شاہد کو دو دو سال قید کی سزا بھی سنائی۔
پولیس نے سانحہ کوٹ رادھا کشن کیس کا چالان 2014 میں عدالت میں پیش کیا تھا جس میں 103 ملزمان کو نامزد کیا گیا تھا۔ نومبر 2014 میں لاہور سے 60 کلومیٹر دور شہر کوٹ رادھا کشن میں ایک اینٹ بھٹے پر کام کرنے والے مسیحی میاں بیوی 25 سالہ شمع جو حمل سے تھی اوراس کے شوہر شہزاد پر قرآن پاک کی توہین کا الزام لگاتے ہوئے مشتعل بھیڑ نے پیٹ پیٹ کر ہلاک کرنے کے بعد انہیں زندہ جلادیا تھا۔
بتایا جاتا ہے کہ 1200کے مجمع نے ان دونوں کو اینٹ بھٹے پر لاکر ایک جگہ بند کر دیا تھا اور وہ فرار نہ ہو سکیں اسے یقینی بنانے کے لیے ان دونوں کی ٹانگیں توڑ دی گئی تھیں۔ حملہ آوروں نے یہ دیکھ کر کہ شمع کے کپڑوں میں آگ نہیں لگ سکے گی اسے سوتی جوڑا پہنایااور جلا دیا۔

Read all Latest pakistan news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from pakistan and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Atc sentences five to death over burning alive christian couple in Urdu | In Category: پاکستان Pakistan Urdu News

Leave a Reply