قصور کی بچی سے جنسی زیادتی و قتل کیس میں فیصلہ محفوظ، ہفتہ کو سنایا جائے گا

لاہور: لاہور کی ایک انسداد دہشت گردی عدالت نے قصور کی رہائشی ایک چھ سالہ بچی زینب امین سے جنسی زیادتی اور قتل کیس میں اپنا فیصلہ محفوظ کر لیا ہے۔یہ فیصلہ17فروری بروز ہفتہ سنایاجائے گا۔
واضح رہے کہ زینب 4جنوری کا لاپتہ ہو گئی تھی اور9جنوری کو قصور میں کوڑے کے ایک ڈھیر پر اس کی لاش پائی گئی تھی۔ اس کے پوسٹمارٹم سے انکشاف ہوا کہ قتل سے پہلے اس سے جنسی زیادتی کی گئی تھی جس پر ملک گیر پیمانے پر غم و غصہ پھوٹ پڑا اور جگہ جگہ احتجاجی مظاہرے کیے گئے۔
زینب سے جنسی زیادتی کرنے کا واقعہ ایک سال کے دوران دس کلومیٹرکے دائرے کیں ہونے والا اس نوعیت کا12کیس تھا۔23جنوری کو حکومت پنجاب نے عمران علی نام کے اصل مشتبہ کو گرفتار کرلیے جانے کا اعلان کیا۔انسداد دہشت گردی عدالت کے جج سجاد احمد نے یومیہ بنیاد پر معاملہ کی 10فروری سے لاہور کی لکھپت جیل میںسماعت کر کے عمران کو کیسکا مجرم قرار دیا اور فیصلہ محفوظ کر لیا۔

Title: atc reserves judgement in zainab murder case | In Category: پاکستان  ( pakistan )

Leave a Reply