پاکستان میں حکمراں اتحاد کی فوج و عدلیہ کو آئینی دائرے میں رہ کر کام کرنے کی تلقین

اسلام آباد: ملک کی پانچ بڑی پارٹیوں نے ، جن میں چار حکمراں اتحاد سے ہیں،پارلیمنٹ کی بالا دستی اور تحفظ جمہوری عمل تحریک چلانے کا عہد کرتے ہوئے فوج اور عدلیہ کو تلقین کی کہ وہ آئینی دائرے میں رہتے ہوئے اپنی ذمہ داریاں نبھائیں۔
یہاں نیشنل لائبریری آڈیٹوریم میں ووٹ کی تقدیس کے عنوان سے منعقد ایک قومی سمینار سے خطاب کرتے ہوئے پاکستان مسلم لیگ نواز(پی ایم ایل این)کے رہبر اعظم میاں محمد نوازشریف ، پختون خوا ملی عوامی پارٹی کے صدر محمود خان اچک زئی ، جمیعت علمائے ہندکے سربرہ مولانا فضل الرحمٰن اور نیشنل پارٹی کے صدر حاصل بزنجو نے حکومتی معاملات اور حکومتی دائرہ اقتدار میں عدلیہ اور فوج کی تسلسل سے مداخلت پر سخت تشویش ظاہر کی اور انتباہ دیا کہ اگر انہوں نے اب کوئی قدام نہ کیا تو ملک ایک بار پھر 1971جیسی تباہ کن صورت حال سے دوچار ہو جائے گا۔
عدلیہ مخالف تقاریر کے نشریہ پر پابندی لگانے کے حوالے سے لاہور ہائی کورٹ کی ہدایات کی روشنی میں پاکستان کے سرکاری ٹیلی ویژن اور زیادہ تر نجی ٹی وی چینلوں نے سمینار کے مقررین کی تقاریر کو نشر نہیں کیا۔

Read all Latest pakistan news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from pakistan and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Army judiciary urged to work within constitutional framework in Urdu | In Category: پاکستان Pakistan Urdu News

Leave a Reply