آرمی پبلک اسکول خونریزی کا اصل ملزم افغانستان میں ایک ڈرون حملہ میں مارا گیا

پشاور: دو سینیئر سیکورٹی اہلکاروں نے دعویٰ کیا ہے کہ یہاں کے آرمی پبلک اسکول پر دہشت گردانہ حملہ کا، جس میں 144طلبا اور عملہ کے اراکین ہلاک ہوئے تھے، ماسٹر مائنڈافغانستان میں ایک ڈڑون حملہ میں ہلاک ہو گیا۔
ان افسروں نے ڈان کو بتایا کہ عمر منصور عرف خلیفہ منصور عرف عمر نارے افغانستان کے ننگر ہار صوبہ کے بندر علاقہ میں ہفتہ کے روز کیے گئے ایک ڈرون حملہ میں ایک دوسرے انتہا پسند قاری سیف اللہ کے ساتھ مارا گیا۔اہلکاروں میں سے ایک نے یہ بھی بتایا کہ انہیں معتبر ذرائع سے اطلاع ملی ہے کہ منصور سیف اللہ کے ساتھ، جو خود کش بمباروں کا مانچارج تھا، مارا جا چکا ہے ۔
ہمیںیہ جو اطلاع ملی ہے نہایت پختہ ہے۔تاہم قاری سیف اللہ کی ہلاکت پر کچھ شبہ ہے ۔ایک اہلکار نے کہا کہ 90فیصد اس کے امکانات ہیں کہ وہ بھی نارے کے ساتھ مارا جا چکا ہے ۔جبکہ دوسرے اہلکار نے کہا کہ وہ اس بات کا پتہ لگانے میں لگے ہیں کہ جس وقت یہ ڈرون حملہ ہوا تو وہ بھی اس مقام پر تھا یا نہیں جسے نشانہ بنایا گیا تھا۔
واضح رہے کہ21مئی کو بلوچستان میں افغان طالبان سربراہ ملا اختر منصور کی ڈرفون حملہ میں ہلاکت کے چار روز بعد25مئی کو امریکہ نے عمر نارے کو ایک عالمی دہشت گرد قرار دےدیا تھا۔ جس سے ہٹ لسٹ میں ان کے نام کی شامل کرنے کی راہ ہموار ہو گئی تھی۔

Read all Latest pakistan news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from pakistan and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Aps massacre mastermind killed in us drone strike in Urdu | In Category: پاکستان Pakistan Urdu News

Leave a Reply