القاعدہ میری رہائی کے عوض الظواہری کے کنبہ کی کچھ خواتین کی رہائی چاہتا تھا:علی حیدر گیلانی

لاہور: سابق وزیر اعظم یوسف رضا گیلانی کے بیٹے علی حیدر گیلانی نے اپنے اغوا کے دور کے حالات پر اپنی خاموشی توڑتے ہوئے کہا ہے کہ انہیں القاعدہ والوں نے اغوا کیا تھا اور وہ چاہتے تھے کہ ان کی رہائی کے عوض تنظیم کے رہنما ایمن الظواہری کے کنبہ کی خواتین کو رہا کر دیا جائے۔
لاہور میں اپنی رہائش گاہ پر بی بی سی اردو سے بات کرتے ہوئے گیلانی نے کہاکہ وہ تین سال تک القاعدہ کی قید میں تھے۔علی گیلانی نے کہا کہ ان کی قید کے دوران ان کے ہمراہ القاعدہ کا ضیاءنام کاایک اہم رکن بھی تھا ۔ القاعدہ ایمن الظواہری کے کنبہ کی کچھ خواتین کی رہائی کے ساتھ ساتھ ایک کثیر رقم کا بھی مطالبہ کیا جا رہا تھا۔
انہوں نے کہا کہ اگرچہ اغوا سے پہلے انہیں کہیں سے بھی اغوا کی کوئی دھمکی نہیں ملی تھی ۔ہاں انہیںبتایا گیا تھا کہ ان کا تعاقب کیا جارہاہے۔علی گیلانی کو گذشتہ ماہ ہی افغان اور امریکی فوج نے مشترکہ کارروائی کر کے افغانستان کے پکیتہ صوبہ میں القاعدہ کے ایک کمپاو¿نڈ سے برآمد کیا تھا۔

Read all Latest pakistan news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from pakistan and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Al qaeda wanted zwahiris relatives released in exchange for my freedom ali gilani in Urdu | In Category: پاکستان Pakistan Urdu News

Leave a Reply