چکوال کے دالمیا گاؤں سے احمدی فرقہ کے افراد کی جان کے خوف نقل مکانی

چکوال:چکوال کے دلمیال گاؤں میں احمدیوں کی ایک عبادت گاہ پر مشتعل بھیڑ کے حملے کے بعد خوفزدہ ہو کر احمدی فرقہ کے افراد نے گاؤں چھوڑکر جانا شروع کر دیا۔واضح رہے کہ اس حملہ میں دو افراد ہلاک اور ایک زخمی ہو گیا تھا۔ہلاک ہونے والوں میں ملک خالد جاوید نام کا ایک65سالہ بزرگ بھی شامل ہے۔ان کی میت چناب نگر لے جائی گئی اور وہیں ان کی تدفین عمل میں آئی۔
ان کی تدفین میں جو لوگ شرکت کرنے گئے تھے وہ واپس گاؤں نہیں آئے اور دیگر کنبے بھی جان کے خطرے سے گاؤں چھوڑ کرجارہے ہیں۔ایک گاؤں والے نے بتایا کہ اس کے گھر کے بازو میں تین احمدی کنبہ رہائش پذیر تھے لیکن وہ عبادت گاہ پر حملے بعد خوفزدہ ہو کرگھر چھوڑ کر کسی محفوظ مقام پر چلے گئے۔ان کے مویشی گھر میں ہی بندھے ہیں۔
میں نے ان کے لیے کچھ چارے کا بندوبست کیا اور آج انہیں پانی پلایا۔مویشی بندھے ہوئے ہی اور پیر سے بھوکے پیاسے ہیں۔اس گاؤں والے نے مزید بتایا کہ اور بھی دیگر احمدی لوگ گاؤں چھوڑ کر چلے گئے اور جو جو کچھ باقی رہ گئے ہیں ان کی حفاظت پر پولس، رینجرز اور فوجی اہلکار تعینات کر دیے گئے ہیں۔

Read all Latest pakistan news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from pakistan and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Ahmadi families leaving dulmial village after mob violence in Urdu | In Category: پاکستان Pakistan Urdu News

Leave a Reply