پاکستان میں عدالت کے باہرخودکش دھماکہ، وکیل سمیت 6ہلاک،چاروں بمبار مارے گئے

پشاور: پاکستان کے شمال مغربی چارسدہ شہر میں آج ایک خودکش حملہ آور نے ایک کچہری میں خود کو دھماکہ کرکے اڑا لیا جس میں ایک وکیل سمیت کم از کم6افراد ہلاک ہو گئے۔ ضلع انتظامیہ ذرائع نے بتایا کہ سیکورٹی فورسز نے نے جب ان خود کش حملہ آوروں کو للکارا تو ان میں سے ایک نے کچہری میں داخل ہو کر خود کو دھماکہ سے اڑا لیا۔ جبکہ دیگر تین کو، جو کچہری میں زبردستی گھسنے کی کوشش کر رہے تھے، سیکورٹی اہلکاروں نے گولی مار کر ہلاک کر دیا ۔
ایک عینی شاہد محمد شہباز نے بتایا کہ جس وقت یہ دھماکہ ہوا اس دوران وہ کچہری کے احاطے میں ہی تھا۔ جیسے ہی دھماکہ ہوا میں اپنی جان بچانے کینٹین کی جانب دوڑا اور دیوار پر چڑھ گیا۔ جہاں سے اس نے چاروں طرف لوگوں کو زخمی اور مردہ حالت میں پڑے دیکھا۔ کالعدم دہشت گرد تنظیم جماعت الاحرار نے اس دھماکے کی ذمہ داری قبول کی ہے۔ عینی شاہدین کے مطابق ہلاک بمباروں کے باقیات بمع دھماکہ خیز مواد اور بارودسڑک کے کنارے پرے ہیں۔
پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان نے، جن کی پارٹی خیبر پختون خوا کی حکمراں جماعت ہے،پولس کی مستعدی کو سراہا کہ جس کی فوری کارروائی سے وسیع پیمانے پر ہلاکتیں ہونے سے بچ گئیں۔ انٹر سروسز پبلک ریلیشنز کے ڈائریکٹر جنرل آصف غفور نے ٹوئیٹ کر کے کہا کہ فوجی سربراہ جنرل جاوید باجوا نے بھی اس حملہ کا فی الفور اورمنھ توڑ جواب دینے پر سیکورٹی فورسز کی مدح سرائی کی۔

Title: 6 killed several injured in multiple blasts outside court in charsadda | In Category: پاکستان  ( pakistan )

Leave a Reply