دشمن ملکوں کی خفیہ سروسز ایران کےخلاف سرگرم عمل ہے مگر انہیں ابھی تک کوئی کامیابی نہیں ملی : آیت اللہ خامنہ ای

تہران: اسلامی انقلاب کے رہبر اعظم آیت اللہ سید علی خامنہ ای نے ایران کے خلاف وسیع اور پیچیدہ جنگ کا انتباہ دیا ہے اور کہا ہے کہ اس ضمن میں جاسوس ایجنسیوں کا خاص کردار ہے۔آیت اللہ نے ایرانای انٹیلی جنس وزیر اور ان کے عملہ سے تہران میں بات کرتے ہوئے کہا کہ ہم ایک وسیع و عریض میدان جنگ کے وسط میں ہیں اور دو طرف دشمنوں نےنہایت طاقتور محاذ قائم کر رکھے ہیں۔دوسری طرف جاسوس سرگرمیاں اس ٹکراو¿ کا اصل محور ہیں۔لیکن اسی دوران انہوں نے ا س پر بھی زور دیا کہ ان دشمن ملکوںکی خفیہ سروسز تمام امکانات کے باوجود ابھی تک کوئی بڑی کامیابی حاصل نہیں کر سکی۔آیت اللہ نے ایرانی حکام کو دشمن کی چالوں ،حرکا ت و سکنات اور منصوبوں کو نظرانداز کرنے اور زیادہ اہمیت نہ دینے کےخلا ف انتباہ دیا۔اور کہا کہ وہ اپنی انتیلی جنس کی پیچیدہ جنگ میں ایران کے خلاف کئی چالیں چلیں گے ، ڈاٹا کا سرقہ مارنے سمیت مختلف حربے اختیار کریںگے ،پالیسی سازوں کے اعداد و شمار بدلنے ، لوگوں کے عقیدوں میں تبدیلی اور مالی و سلامتی بحران پید کر نے جیسے طریقے اختیار کیے جائیں گے۔

Title: supreme leader spy agencies spearheading enemy war on iran | In Category: خبریں  ( news )

Leave a Reply