عرب معاملات میں ایران کی مداخلت پر شاہ سلمان کا اظہار ناخوشی

ریاض: خادم حرمین شریفین و فرمانروائے سعودی عرب شاہ سلمان بن عبد العزیز آل سعود نے عرب معاملات میں ایران کی مداخلت پر شدید ردعمل کا اظہار کیا ۔انہوں نے مملکت میں عرب عرب لیگ کے29ویں اجلاس میں اپنے خطاب میں اسرائیل میں واقع اپنے سفارت خانہ کو تل ابیب سے یروشلم منتقل کرنے پر امریکہ کی بھی سخت تنقید کی اور دہشت گردی کو عرب ملکوں کے لیے سب سے بڑا چیلنج بتایا۔
تاہم شاہ سلمان نے اپنے خطاب میں شام کا ذکر کرنے سے گریز کیا۔پوری عرب دنیا سے 17ممالک کے سربراہان اجلاس کے لیےن مشرقی سعودی شہر ظہران میں جمع ہیں۔
البتہ اس اجلاس میں شام کے صدر بشار الاسد نہیں ہیں۔کیونکہ سات سال پہلے ہی شام کو عرب لیگ سے خارج کیا جاچکا ہے۔یہ اجلاس ایسے موقع ہپر ہو رہاہے جب دنیاکی بڑی طاقتیں شام کے معاملہ پر ایک دسرے سے ٹکرا رہی ہیں ، امریکہ ، برطانیہ اور فرانس نے کیمیائی حملے پر جوابی کارروائی کرتے ہوئے شام میں اپنے اہداف پر میزائل حملے کیے اورسعودی عرب اور ایران میںکشیدگی بڑھ رہی ہے۔

Title: saudi king slams irans interference in arab affairs | In Category: خبریں  ( news )

Leave a Reply