اشرف غنی نے امن مذاکرات میں شامل ہونے کہا ہے خود سپردگی کرنے نہیں:امریکہ

واشنگٹن : امریکہ کے ایک اعلیٰ اہلکار نے کہا ہے کہ صدر افغانستان اشرف غنی نے طالبان گروپ کو امن مذاکرات میں شامل ہونے کہا ہے لیکن اس کا مطلب یہ نہیں سمجھنا چاہیے طالبان کو خود سپردگی کرنے کہا جارہا ہے۔
وزارت خارجہ میں جنوب و وسطی ایشیائی امور کے انچارج ایلس ویلز نے میڈیا کے نمائندوں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ صدر غنی نے کابل دوئم سربراہ کانفرنس کے دوران با وقار عمل کی پیش کش کی ہے تاکہ کسی سیاسی فریم ورک تک پہنچا جا سکے۔
انہوں نے یہ بات مزید زور دے کرکہی کہ یہ مذاکرات غیر مشروط ہیں اور ایسا عمل ہیں جو تشدد کی راہ ترک کرنے، دہشت گردی سے ناطہ توڑنے اور افغان آئین کا احترام کرنے کا موجب بنیں گے۔
ایلس نے کہا کہ لیکن یہ بات بالکل واضح ہے کہ وہ سمجھتے ہیں کہ حکومت افغانستان نے طالبان کے مطالبات کو بغور سنا ہے اور وہ دفتر و پاسپورٹس جیسے معاملات پر فی الفور غور کرنے کو تیار ہے اور صدر غنی کی پیش کش میں یہ سب مذکور ہے۔

Read all Latest news news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from news and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: president ghani offered taliban peace talks not surrender us in Urdu | In Category: خبریں  ( news ) Urdu News

Leave a Reply