اوڑی حملے کا مقصد جموں و کشمیر میں تشدد کو ہوا دینا اور جنگی صورتحال پیدا کرنا تھا: محبوبہ مفتی

سری نگر: شمالی کشمیر کے اوڑی سیکٹر میں فوجی بیس کیمپ پر فدائین حملے کی سخت مذمت کرتے ہوئے جموں وکشمیر کی وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی نے کہا ہے کہ اس حملے کا مقصد خطے میں تشدد کو بڑھاوا دینے اور جنگ جیسے حالات پیدا کرنا ہے۔
انہوں نے حملے میں جاں بحق ہوئے فوجیوں کو خراج عقیدت ادا کرتے ہوئے غمزدہ کنبوں کے ساتھ دلی تعزیت کا اظہار کیا ہے۔ انہوں نے حملے میں زخمی ہوئے فوجیوں کی جلد صحت یابی کے لئے بھی دعا کی ہے۔ وزیر اعلیٰ نے کہا کہ اوڑی میں کئے گئے اس حملے سے جموں و کشمیر اور اس کے ارد گرد ماحول کے پر تناؤ ہو نے کا خدشہ ہے۔
انہوں نے کہا کہ بدقسمتی سے ریاستی عوام کو ایسی صورتحال کا سب سے زیادہ خمیازہ بھگتنا پڑتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہند پاک کے مابین کشیدگی کا سب سے برا اثر ریاست جموں و کشمیر پر پڑتا ہے اور ریاستی عوام کو گزشتہ چھ دہائیوں کے دوران کافی خمیازہ بھگتنا پڑا ہے۔

Read all Latest kashmir news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from kashmir and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Uri attack aimed at creating war like situation says mehbooba mufti in Urdu | In Category: کشمیر Kashmir Urdu News

Leave a Reply