شمالی کشمیر میں انتہا پسندوں سے مسلح تصادم ،3 بی ایس ایف اہلکار شہید، ایک انتہا پسند ہلاک

سری نگر: شمالی کشمیر کے سرحدی ضلع کپواڑہ کے مڑھل سیکٹر میں لائن آف کنٹرول (ایل او سی) کے نزدیک جنگجوؤں اور سیکورٹی فورسز کے درمیان تصادم میں 3 بارڈر سیکورٹی فورس (بی ایس ایف) اہلکار اور ایک مشتبہ انتہا پسند ہلاک ہوگیا۔
بی ایس ایف ترجمان این این جوشی کے مطابق انتہا پسندوں نے کپواڑہ کے مڑھل سیکٹر کے جنگلوں میں واقع ایک بی ایس ایف چوکی پر حملہ کردیا۔ بی ایس ایف نے جوابی کاروائی کی جس کے بعد طرفین کے مابین زبردست فائرنگ کا تبادلہ ہوا جس میں دو بی ایس ایف اہلکار ہیڈ کانسٹیبل چندر پال سنگھ اور کانسٹیبل بابن ساہا شہیداور ایک باغی ہلاک ہوگیا۔
بی ایس ایف کا تیسرا اہلکار جو زخمیوں میں شامل تھا زخموں کی تاب نہ لا کر دم توڑ گیا جس سے شہید ہونے والے بی ایس ایف اہلکاروں کی تعداد اب تین ہو گئی۔
سرکاری ذرائع نے بھی اس کی تصدیق کر دی کہ جو پانچ بی ایس ایف اہلکار زخمی ہوئے تھے ان میں سے ایک زخموںں کی تاب نہ لاکر چل بسا۔ بی ایس ایف ترجمان نے بتایا کہ انتہا پسندوںکے فرارکے راستے بند کرنے کے لئے علاقے کو سخت محاصرے میں لے لیا گیا ہے اور سیکورٹی فورسز کی اضافی نفری وہاں روانہ کردی گئی ہے۔

Read all Latest kashmir news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from kashmir and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Two bsf personnel suspected militant killed in macchil sector near loc in Urdu | In Category: کشمیر Kashmir Urdu News

Leave a Reply