تینگ پورہ نوجوان کی لاش پوسٹ مارٹم کیلئے قبر سے نکالی گئی

سری نگر: (یو این آئی) سپریم کورٹ کے حکم پر سری نگر کے تینگ پورہ میں ایک پولیس افسر کی جانب سے مبینہ طور پر اپنے گھر پر مارے گئے نوجوان کی لاش پوسٹ مارٹم اور قتل کے اسباب کا پتہ لگانے کیلئے آج قبر سے نکالی گئی۔ سری نگر کے ضلع اور سیشن جج راشد علی کی نگرانی میں آج صبح شبیر احمد میر نامی نوجوان کی لاش قبر سے نکالی گئی۔
اس موقع پر ہلاک شدہ کے کنبہ کے اراکین بھی موجود تھے۔ نوجوان کی لاش سری نگر کے سرکاری میڈیکل کالج (جی ایم سی) لے جائی گئی جہاں سٹی اسکین اور ایکس رے کیا گیا۔ بعد میں لاش پوسٹ مارٹم کیلئے پولیس کنٹرول روم بھیج دی گئی۔
سپریم کورٹ نے گزشتہ 12 اگست کو 26 سالہ نوجوان کی لاش کو ہائی کورٹ کے جج کی نگرانی میں قبر سے نکالنے اور اس کا پوسٹ مارٹم کرانے کا حکم دیا تھا۔ ہلاک شدہ کے والد عبدالرحمن میر نے الزام لگایا تھا کہ گزشتہ 10 جولائی کو ڈپٹی کمشنر آف پولیس یاسر قادری نے ان کے بیٹے کو گھر پر نزدیک سے گولی مار دی تھی۔ حالانکہ جموں و کشمیر پولیس نے دعوی کیا تھا کہ وادی میں احتجاجی مظاہرے کے دوران نوجوان کی موت ہوئی تھی۔

Read all Latest kashmir news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from kashmir and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Tengpora youths body exhumed postmortem done in Urdu | In Category: کشمیر Kashmir Urdu News

Leave a Reply