صدر ٹرمپ کے حکم نامے کے خلاف جموں وکشمیر اسمبلی میں سی پی ایم ممبریوسف تاریگامی کا واک آؤٹ

جموں: نو منتخب امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ کے مسلم اکثریتی آبادی والے 7 ممالک کے شہریوں کے امریکہ میں داخلے پر پابندی سے متعلق حکم نامے کے خلاف کیمونسٹ پارٹی آف انڈیا (مارکسٹ) کے رکن محمد یوسف تاریگامی نے پیر کے روز جموں وکشمیر کی قانون ساز اسمبلی میں احتجاج کے بطور ایوان سے واک آؤٹ کیا۔ مسٹر تاریگامی نے واک آوٹ سے قبل ایوان کو بتایا ’لوگوں پر پابندی عائد کرنے سے متعلق فیصلہ افسوسناک ہے اور اس کے عالمی سطح پر مضر اثرات مرتب ہوں گے‘۔
اسمبلی کی کاروائی شروع ہوتے ہی سی پی آئی (ایم) کے لیڈر نے یوان کے وسط میں پہنچ کر ڈونالڈ ٹرمپ کے خلاف شدید نعرے بازی کی۔ انہوں نے کہا ’ٹرمپ کے اس افسوسناک فیصلے سے دہشت گردی مزید پروان چڑھے گی اور امریکہ میں مقیم مسلمانوں میں عدم تحفظ کا احساس پیدا ہوگا‘۔ مسٹر تاریگامی نے ڈونالڈ ٹرمپ کے شام سے آنے والے پناہ گزینوں اور سات مسلم اکثریتی آبادی والے ممالک کے شہریوں کے امریکہ میں داخلے پر پابندی سے متعلق حکم نامے کے خلاف شدید احتجاج کیا۔ خیال رہے کہ ڈونالڈ ٹرمپ نے جمعہ کے روز ایک حکم ناے پر دستخط کئے جس کے تحت امریکہ کا پناہ گزینوں کا پروگرام معطل کر دیا گیا اور ایران، عراق، شام، لیبیا، صومالیہ، سوڈان، اور یمن کے شہریوں کی امریکہ آمد پر 90 دن کی پابندی لگا دی گئی۔

Title: tarigami walks out against trumps order of banning immigrants from 7 nations | In Category: کشمیر  ( kashmir )

Leave a Reply