علیحدگی پسند کشمیری لیڈر سید علی گیلانی نے ایک پاکستانی سمینار میں ہندوستان کو برا بھلا کہا

نئی دہلی:ہندوستان میں رہتے ہوئے بھی علیحدگی پسند کشمیری رہنما اپنے ہند مخالف جذبات کا کسی بھی پلیٹ فارم خاص طور پر پاکستان میں منعقد کسی پروگرام میں اظہار کرنے کا موقع ہاتھ سے نہیں جانے دیتے۔
اس کا ایک اور ثبوت اسوقت مل گیا جب سخت گیر حریت کانفرنس کے چیرمین وہند مخالف علیحدگی پسندلیڈر سید علی شاہ گیلانی نے، جو ہندوستان میں عیش وعشرت کی زندگی گذار رہے ہیں، ایک بار پھر پاکستان کے تئیں اپنی وفاداری کا اظہار کرتے ہوئے ہندوستان کو برا بھلا کہا ۔
گیلانی نے میر پور یونیورسٹی کے زیر اہتمام پاکستان کے دارالخلافہ اسلام آباد کے جناح کنونشن سینٹر میں”کشمیر انٹرنیشنل کانفرنس “ کے عنوان سے منعقد ایک سمینار سے اپنے ویڈیو خطاب میں کہا کہ انہیں امید ہے کہ یہ سمینار ہندوستانی کشمیریوں کے جذبات کی نمائندگی کرے گا۔
انہوں نے کہا کہ ہندستان نے کشمیر پر غاصبانہ قبضہ کر رکھا ہے اور کشمیری عوام پر بہت زیادہ مظالم ڈھا رہا ہے ۔اب تک 6لاکھ کشمیری شہید کیے جاچکے ہیں اور ہزاروں لاپتہ ہیں یا جیلوں میں سڑرہے ہیں۔جب تک کشمیریوں کو حق خود مختاری نہیں ملے گا کشمیریوں کی جدو جہد جاری رہے گی۔انہوں نے کہا کہ مسئلہ ہندوستان و پاکستان کے درمیان اراضی کا نہیں ہے بلکہ یہ ایک کروڑ 20لاکھ کشمیریوں کا مسئلہ ہے۔
پاکستان کو چاہئے کہ وہ پاکستان میں متعین تمام غیر ملکی سفیروں کو کشمیر کاپیغام پہنچا دے۔انہوں نے کہا کہ اس کانفرنس کے ذریعہ ، جس میں ہندوستانی کشمیری رہنما ظفر اکبر بھٹ، آغا سید حسن بڈگامی، وکلا، صحافی اور دانشوروں کا وفد، یورپی پارلیمنٹ کے اراکین اوریو کے کے کونسلرز بھی موجود تھے،کشمیر یوں پر توڑے جانے والے مظالم کو اجاگر کیا جائے ۔
انہوں نے یہ بھی کہا کہ ہمارے لیے ایک مستحکم پاکستان اشد ضروری ہے۔ انہوں نے آخر میں یہ کہا کہ انشاءاللہ مسئلہ کشمیر کے تصفیہ میں پاکستان ہماری مدد کرے گا۔

Title: syed ali shah geelani abuses india in a pakistan seminar | In Category: کشمیر  ( kashmir )

Leave a Reply