کشمیرمیں اقلیتی درجہ نہ دینے کے خلاف سکھوں کی ریاست گیر ایجی ٹیشن کی دھمکی

سری نگر: کل جماعتی سکھ کوآرڈی نیشن کمیٹی نے وادی کشمیر کی دو پارلیمانی نشستوں پر ہونے والے ضمنی انتخابات کے سلسلے میں کسی بھی سیاسی جماعت کے لئے مہم نہ چلانے کا اعلان کردیا ہے۔ سکھوں کی اس تنظیم نے یہ اعلان جموں وکشمیر کی متواتر حکومتوں کی جانب سے ریاست میں مقیم سکھوں کو اقلیت کا درجہ نہ دیے جانے کے خلاف بطور احتجاج کیا ہے۔ کمیٹی کے چیئرمین جگموہن سنگھ رینا نے جمعرات کو یہاں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے سکھوں کو فوری طور پر اقلیت کا درجہ نہ دیے جانے پر آنے والے دنوں میں ریاست گیر ایجی ٹیشن شروع کرنے کی دھمکی دی۔برسراقتدار پیپلز ڈیموکریٹک پارٹی (پی ڈی پی) کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے جگموہن سنگھ نے کہا ’اس پارٹی نے سکھ کیمونٹی کو اقلیت کا درجہ دینے کا وعدہ کیا تھا، اس وعدے کی بدولت پی ڈی پی سکھوں کی حمایت سے کئی سیٹیں جیتنے میں کامیاب ہوئی تھی‘۔
انہوں نے کہا ’ریاست میں مقیم سکھ ایک طویل عرصے سے اقلیت کا درجہ دیے جانے کا مطالبہ کرتے آئے ہیں، جس کوابھی تک پورا نہیں کیا گیا ہے۔ پی ڈی پی نے 2014 کے اسمبلی انتخابات میں سکھوں کو اقلیت کا درجہ دیے جانے کا وعدہ اپنے انتخابی منشور میں بھی شامل کیا تھا‘۔ .مسٹر رینا نے کہا کہ پی ڈی پی اپنا وعدہ بھول گئی ہے اور گذشتہ چند برسوں سے اقتدار میں رہنے کے باوجود سکھوںکو اقلیت کا درجہ دینے کی جانب کوئی پیش رفت نہیںکی گئی۔ انہوں نے کہا ’پی ڈی پی نے نیشنل کمیشن فار مینارٹی ایکٹ کی جموں وکشمیر تک توسیع کے اپنے وعدے کو بھی ابھی تک پورا نہیں کیا ہے‘۔ اے پی ایس سی سی چیئرمین نے کہا ’اس کے برعکس ریاستی حکومت نے حال ہی میں سکھوں کو اقلیتی درجہ دیے جانے کے خلاف سپریم کورٹ میں اپنا اعتراض دائر کیا ‘۔ انہوں نے الزام لگایا کہ پی ڈی پی سے قبل نیشنل کانفرنس اور کانگریس کی مخلوط حکومت نے بھی سکھ فرقہکو دھوکہ دیا۔

Read all Latest kashmir news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from kashmir and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: sikh organisation to launch state wide agitation against jammu and kashmir govt in Urdu | In Category: کشمیر  ( kashmir ) Urdu News

Leave a Reply