کشمیری علیحدگی پسند لیڈروں کی عوامی مارچ کی کال ناکام

سری نگر: کشمیر انتظامیہ نے پیر کو صوبائی دارالحکومت سری نگر کے کچھ حصوں بالخصوص تاریخی لال چوک کی جانب جانے والے تمام راستے بند اور علیحدگی پسند قیادت سید علی گیلانی، میرواعظ مولوی عمر فاروق اور محمد یاسین ملک کی آزادانہ نقل وحرکت پر روک لگاتے ہوئے ہوئے ’لال چوک‘ تک عوامی مارچ کی کال کو ناکام بنادیا۔ خیال رہے کہ علیحدگی پسند رہنماؤں نے پیر کے روز تاریخی لال چوک تک مارچ کرنے ک کی کال دی تھی۔
تاہم کشمیر انتظامیہ نے اس مجوزہ پروگرام کو ناکام بنانے کے لئے جہاں تاریخی لال چوک کی طرف جانے والی تمام سڑکوں کو خاردار تار سے سیل کردیا تھا، وہاں حریت کانفرنس کے دونوں دھڑوں کے سربراہان مسٹر گیلانی اور میرواعظ کو کسی بھی احتجاجی جلوس کی قیادت کرنے سے روکنے کے لئے نظربند کیے رکھا۔ ایک رپورٹ کے مطابق جموں وکشمیر لبریشن فرنٹ (جے کے ایل ایف) کے چیئرمین محمد یاسین ملک نے اپنی گرفتاری ٹالنے کے لئے سیول لائنز کے سرائے بالا میں واقع دستگیر صاحبؒ کے آستان عالیہ میں پناہ لے رکھی تھی۔
علیحدگی پسند قیادت نے گذشتہ شام جاری اپنے ایک مشترکہ بیان میں کہا تھا ’جملہ مزاحمتی قیادت سید علی گیلانی، میرواعظ محمد عمر فاروق اور محمد یاسین ملک پیر کو مجوزہ مزاحمتی پروگرام کے تحت بالترتیب حیدرپورہ، نگین اور مائسمہ سے صبح ساڑھے گیارہ بجے لال چوک کی طرف مارچ کریں گے‘۔

Read all Latest kashmir news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from kashmir and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Separatists march foiled in srinagar in Urdu | In Category: کشمیر Kashmir Urdu News

Leave a Reply