کشمیری علیحدگی پسندوں نے بدھ کو کشمیر بند اور جمعہ کو مظاہرے کی کال دی

سری نگر: کشمیری علیحدگی پسند قیادت سید علی گیلانی، میرواعظ مولوی عمر فاروق اور محمد یاسین ملک نے چاڈورہ بڈگام میں سیکورٹی فورسز کی فائرنگ میں2شہریوں کی ہلاکت اور درجنوں کو زخمی کرنے کے واقعے کو کشمیر میں جاری ریاستی دہشت گردی کا منہ بولتا ثبوت قرار دیتے ہوئے بدھ29مارچ کو ریاست گیر ہڑتال کرنے اور جمعہ 31مارچ کو نماز کے بعد پرامن مظاہرے کرنے کی کال دی ہے۔
انہوں نے الزام لگایا ہے کہ چاڈورہ سانحہ فوجی سربراہ کی اس دھمکی کا عملی نتیجہ ہے، جس میں انہوں نے انکاؤنٹر سائیٹ پر مظاہرہ کرنے والے شہریوں کو اپرگراؤنڈ تصور کرنے اور ان کے خلاف سخت کاروائی کا عندیہ دیا تھا۔
یہاں جاری ایک بیان میں تینوں علیحدگی پسند لیڈروں نے کہا کہ فوج، ان کی معاون فورسز اور ریاستی پولیس جموں کشمیر میں ایک منصوبہ بند طریقے پر عام شہریوں کو قتل کررہی ہیں اور اس قتلِ عام کے لیے ذمہ دار فورسز افسروں واہلکاروں سے کوئی باز پرس ہوتی ہے اور نہ ان کے خلاف کوئی کیس درج کیا جاتا ہے۔ .انہوں نے چاڈورہ واقعے کی کسی غیر جانبدار ادارے کی طرف سے تحقیقات کرانے اور ملوث اہلکاروں کو قرار واقعی سزا دینے کا مطالبہ کیا۔

Read all Latest kashmir news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from kashmir and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Separatists call for kashmir band on wednesday in Urdu | In Category: کشمیر Kashmir Urdu News

Leave a Reply