کشمیری علیحدگی پسند لیڈر 9ستمبر کو دہلی میں این آئی اے ہیڈکوارٹرپر گرفتاری دیں گے

سری نگر: کشمیری علیحدگی پسند قیادت سید علی گیلانی، میرواعظ مولوی عمر فاروق اور محمد یاسین ملک نے 9 ستمبر کو نئی دہلی میں قومی تحقیقاتی ایجنسی (این آئی اے) کے ہیڈکوارٹرس پر احتجاجی دھرنے دینے اور گرفتاری پیش کرنے کا اعلان کردیا ہے۔ میرواعظ اور یاسین ملک نے بدھ کو سری نگر کی تاریخی ومرکزی جامع مسجد میں منعقدہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ’ہم نے 9 ستمبر کو نئی دہلی جانے اور وہاں احتجاج کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے۔ چونکہ این آئی اے کا بنیادی ہدف مزاحمتی قیادت ہے، اس لئے ہم این آئی اے ہیڈکوارٹرس پر گرفتاری پیش کریں گے‘۔ مسٹر گیلانی جنہیں بدستور اپنے گھر میں نظربند رکھا گیا ہے، نے بذریعہ ٹیلی فون پریس کانفرنس سے خطاب کیا۔ یاسین ملک نے این آئی ے کو مخاطب کرتے ہوئے کہا ’تہاڑ جیل کے دروازے کھلے رکھو ، ہم آرہے ہیں‘۔ خیال رہے کہ این آئی اے نے بدھ کی صبح کشمیر اور قومی راجدھانی دہلی میں کم از کم 16 مقامات پر چھاپے مار کر تلاشیاں لیں۔ یہ چھاپہ مار کاروائیاں پاکستان اور دوسرے ممالک سے ہونے والی مبینہ ٹیرر فنڈنگ اور علیحدگی پسندوں کی سرگرمیوں کے حوالے سے این آئی اے کی جانب سے شروع کردہ تحقیقات کے سلسلے میں انجام دی جارہی ہیں۔ تحقیقاتی ایجنسی پہلے ہی متعدد علیحدگی پسند لیڈران اور ایک کشمیری تاجر ظہور احمد شاہ وٹالی کی گرفتاری عمل میں لاچکی ہے۔

Read all Latest kashmir news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from kashmir and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Separatist leaders to court arrest at nia office on september 9 in Urdu | In Category: کشمیر Kashmir Urdu News

Leave a Reply