نوجوان کو جیپ سے باندھنے والے میجر کو اعزاز بخشنے پر علیحدگی پسند رہنماؤں کی احتجاج کی کال

سری نگر: کشمیری علیحدگی پسند قیادت سید علی گیلانی، میرواعظ مولوی عمر فاروق اور محمد یاسین ملک نے کشمیری نوجوان کو جیپ سے باندھنے والے آرمی میجر کو توصیفی سند سے نوازنے اور کورٹ آف انکوائیری کی طرف سے انہیں مبینہ طور پر بری کرنے کو بھارتی فاشزم اور سامراجیت کا منہ بولتا ثبوت قرار دیتے ہوئے اس کے خلاف 26مئی جمعہ کو نماز کے بعد پرامن احتجاج کرنے کی کال دی ہے۔
انہوں نے عالمی عدالتِ انصاف، ایمنسٹی انٹرنیشنل اور حقوقِ بشر کے لیے سرگرم دوسرے مقامی اور بین الاقوامی اداروں سے اپیل کی ہے کہ وہ اس سنگین معاملے کا سنجیدہ نوٹس لیں اور اس ناانصافی کے خلاف آواز اٹھاکر اپنی مفوضہ ذمہ داریوں کو پورا کریں۔
جمعرات کو یہاں جاری ایک مشترکہ بیان میں علیحدگی پسند قائدین نے الزام لگایا کہ بھارتی فوج جموں کشمیر میں سنگین قسم کے جنگی جرائم کا ارتکاب کررہی ہے اور اس کے ہاتھوں اس خطے میں نہتے شہریوں کی زندگیاں زبردست خطرات سے دوچار ہیں۔ کسی کا بھی جان ومال محفوظ نہیں ہے اور ان کے عزت کی بھی کوئی گارنٹی نہیں ہے۔

Title: separatist leaders call for protest over honour to army major gogoi | In Category: کشمیر  ( kashmir )

Leave a Reply