کشمیر میں سیکورٹی فورسز سے ہتھیار چھیننے کی وارداتوں پر فوج کا اظہار تشویش

سری نگر:وادی کشمیر میں جنگجوؤں کے ذریعہ سیکورٹی فورسز سے ہتھیار چھیننے کی وارداتوں پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے چنار کور کے جنرل آفیسر کمانڈنگ لیفٹیننٹ جنرل ستیش دوا نے کہا ’وادی کشمیر بالخصوص جنوبی کشمیر میں ہتھیار چھیننے کی حالیہ وارداتیں باعث تشویش ہیں‘۔
یہ بات انہوں نے شمالی کشمیر کے ضلع بارہمولہ کے سرحدی علاقہ بونیار اوڑی میں منگل کو ’چنار 9جوان کلب‘ کا افتتاح کرنے کے بعد کہیں۔جنوبی کشمیر کے دو اضلاع کولگام اور اننت ناگ میں گذشتہ ایک ماہ کے دوران ہتھیار چھیننے کی کم از کم تین وارداتیں پیش آئیں۔سری نگر جموں قومی شاہراہ پر لسجن کے مقام پر فوجی گاڑی کو پیش آئے حالیہ حادثے کا ذکر کرتے ہوئے لیفٹیننٹ جنرل دوا نے کہا کہ مقامی نوجوانوں اور سیکورٹی فورسز کے درمیان اعتماد میں کوئی کمی نہیں ہے۔
خیال رہے کہ لسجن میں فوجی گاڑی کو حادثہ پیش آنے کے بعد کشمیری نوجوانوں نے ایک فوجی اہلکار کو بچایا تھا۔ انہوں نے کہا کہ ریاست میں امن وامان کی بحالی کے لئے فوج اور دیگر سیکورٹی فورسز بشمول جموں وکشمیر پولیس شانہ بشانہ کام کررہے ہیں۔ دفاعی ذرائع نے بتایا کہ افتتاح کئے گئے ’چنار 9 جوان کلب‘ میں مقامی نوجوانوں کے لئے مختلف سہولیات بشمول انٹرنیٹ کیفے، جمنازیم ، انڈور گیمز اور لائبری دستیاب ہوں گی۔

Read all Latest kashmir news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from kashmir and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Rifle snatching incidents in kashmir cause of concern army in Urdu | In Category: کشمیر Kashmir Urdu News

Leave a Reply