جموں وکشمیر کے 215 تھانوں میں صرف 7 تھانوں میں خواتین ایس ایچ او کے عہدہ پر

جموں: جموں وکشمیر جہاں کی وزیر اعلیٰ ایک خاتون ہیں، میں قائم 215 پولیس تھانوں میں سے صرف 7 تھانوں میں خواتین ایس ایچ او کے فرائض انجام دے رہی ہیں۔ ایک آر ٹی آئی کارکن نے بدھ کے روز یہاں کہا کہ جموں وکشمیر کے 25 پولیس ڈسٹرکٹسمیں قائم 215 تھانوں میں سے صرف 7 تھانوں کی قیادت خواتین عہدیداروں کے ہاتھوں میں ہیں۔
باقی 208 پولیس تھانوں میں مرد ایس ایچ اوز تعینات ہیں‘۔ انہوں نے کہا کہ جن 7 تھانوں میں خواتین ایس ایچ او ہیں ان میں سے 6 پہلے ہی خواتین کے لئے مخصوص ہیں۔ حقیقت تو یہ ہے کہ صرف ایک جنرل تھانے کی باگ ڈور ایک خاتون پولیس کے ہاتھ میں ہے۔ انہوں نے کہا کہ 25 پولیس اضلاع میں سے صرف ایک ضلع کی قیادت ایک خاتون پولیس عہدیدار کررہی ہیں۔ مذکورہ آر ٹی آئی کارکن نے کہا کہ ریاست میں صرف دو آرمڈ پولیس بٹالینوں کی قیادت خاتون کمانڈنٹس کررہی ہیں۔
انہوں نے کہا کہ صرف دو خواتین پولیس عہدیداروں کو عملی کام تفویض کرکے ریاست کی دونوں دارالحکومتوں (سری نگر اور جموں) میں ٹریفک کو منظم کرنے کی ذمہ داری سونپی گئی ہے۔ آر ٹی آئی کارکن رمن شرما نے کہا کہ یہ معلومات انہیں جموں وکشمیر پولیس ہیڈکوارٹرس نے ایک آر ٹی آئی درخواست کے جواب میں فراہم کی ہیں۔

Title: only seven woman officers heading police stations out of 215 across jk | In Category: کشمیر  ( kashmir )

Leave a Reply