شاہ رخ خان کی طرح لاس ایجلس ہوائی اڈے پر دو گھنٹے قیدی کی طرح گذارناپڑے :عمر عبد اللہ

سری نگر:جموں وکشمیر کے سابق وزیر اعلیٰ عمر عبداللہ نے امریکہ میں بے ترتیب امیگریشن چیک پر ناراضگی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ وہ اس کے بجائے گھر میں ہی ٹھہرنا پسند کرتے۔ دوبارہ امیگریشن چیک کی وجہ سے انہیں دو گھنٹے ائرپورٹ پر ہی گذارنے پڑے۔ عمر عبداللہ جو جموں وکشمیر کی سب سے بڑی اپوزیشن جماعت نیشنل کانفرنس کے کارگذار صدر بھی ہیں، نے مائیکرو بلاگنگ کی ویب سائٹ ٹویٹر پر کہا ’امریکہ پہنچنے پر ایک اور بے ترتیب دوبارہ امیگریشن چیک۔
تین دوروں کے دوران تین تین مرتبہ۔ یہ بے ترتیب امیگریشن چیک کا سلسلہ اب تھکا دینے والا ثابت ہورہا ہے‘۔ انہوں نے کہا کہ وہ نیویارک یونیورسٹی کے زیر اہتمام منعقد ایک تقریب میں اظہار خیال کے لئے یہاں آئے ہوئے ہیں۔ لیکن اس کے بجائے میں گھر میں ہی ٹھہرنا پسند کرتا۔ میرے دو گھنٹے ضائع کئے گئے‘۔ انہوں نے شاہ رخ خان جنہیں اس سال کے اوئل میں لاس اینجلس میں حراست میں لیا گیا تھا، کا حوالہ دیتے ہوئے کہا ’میں نے ابھی اپنے دو گھنٹے قیدی کے طور پر گنوا دیے۔ ایسا ہر بار ہوتا ہے۔
لیکن شاہ رخ خان کی طرح مجھے ٹائم پاس کے لئے پوکیمون نصیب نہیں ہوا‘۔ رپورٹوں کے مطابق نیو یارک یونیورسٹی میں 21 اکتوبر کو منعقد ہونے والی تقریب میں عمر عبداللہ کے علاوہ پاکستان کے سابق صدر جنرل پرویز مشرف بھی تقریر کریں گے۔ جبکہ بی جے پی لیڈر سبر منیم سوامی بھی مدعو کئے گئے ہیں۔

Read all Latest kashmir news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from kashmir and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Omar abdullah detained at us airport for checks in Urdu | In Category: کشمیر Kashmir Urdu News

Leave a Reply