ماجد کے بعد اب کسی انتہاپسند کو گھر جانے کی اجازت نہیں دی جائے گی: لشکر طیبہ

سری نگر: کالعدم دہشت گرد تنظیم لشکر طیبہ نے کہا ہے کہ کسی کے بھی گھر والوں کی فریاد پر اب کسی انتہاپسند کو گھر واپس جانے کی اجازت نہیںدی جائے گی۔
تنظیم نے ایک بیان میںکہا ہے کہ یہ سلامتی دستوں کی ایک چال ہے ۔ 18نومبر کو ماں کی فریاد پر لشکر طیبہ کی جانب سے نوجوان فٹ بالر ماجد ارشد خان کو گھر واپسجانے کی اجازت دیے جانے کے بعد پانچ انتہا پسندوںکے گھروالوں نے بھی اپنے بیٹوں سے التجا کی تھی کہ و ہ بندوق رکھ کر واپس آجائیں۔
واضح رہے کہ لشکر طیبہ میں تازہ بھرتی ہونے والے انتہا پسندوں سے ان کے بوڑھے والدین یا نئی نویلی بیویاں ویڈیو کے توسط سے واپس آجانے کی التجاکررہی ہیں۔
ماجد خان کی واپسی کے بعد پولس اور فوج کے اعلیٰ افسران نے اتوار کے روز مقامی لڑکوں سے اپیل کی تھی کہ وہ انتہاپسندی کا راستہ ترک کر کے اپنے گھرواپس آجائیں۔
انسپکٹر جنرل پولس منیر خان نے کہا کہ ماجد خان کی واپسی نہ تو گرفتاری ہے اور نہ خود سپردگی۔ ماجد کے بعد کلگام ضلع کا ایک اور نوجوان تنظیم چھوڑ کر گھر واپس آگیا تھا۔

Read all Latest kashmir news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from kashmir and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: No militant to return home lashkar e toiba in Urdu | In Category: کشمیر Kashmir Urdu News

Leave a Reply