کشمیر میں چوٹیاں کاٹنے کا سلسلہ دراز ہوتا جا رہا ہے ، احتجاج میں شدت

سری نگر: (یو ا ین آئی) وادی کشمیر میں خواتین کی جبری بال تراشی اور ان واقعات کے خلاف اہلیان وادی کا صدائے احتجاج منگل کو مسلسل 42 ویں روز بھی جاری رہا۔ موصولہ اطلاعات کے مطابق وادی میں منگل کو نامعلوم افراد کے ہاتھوں خواتین کے بال کاٹنے کے کم از کم چار نئے واقعات سامنے آئے۔
ان واقعات کے خلاف جہاں لوگوں نے سڑکوں پر نکل کر شدید احتجاج کیا، وہیں سیکورٹی فورسز نے چند ایک مقامات پر احتجاجیوں کو منتشر کرنے کے لئے لاٹھی چارج اور آنسو گیس کا استعمال کیا۔ اس دوران سری نگر کے پولیس تھانہ مائسمہ کے تحت آنے والے کچھ علاقوں میں منگل کے روز کرفیو جیسی پابندیاں نافذ رہیں۔ مائسمہ میں پیر کے روز بال کاٹنے کا واقعہ پیش آنے کے بعد احتجاجیوں اور سیکورٹی فورسز کے مابین شدید جھڑپیں بھڑک اٹھی تھیں۔
پابندیوں کی وجہ سے حاجی مسجد، ریڈکراس روڑ، گاؤ کدل، مدینہ چوک اور اس سے ملحقہ علاقوں میں کاروباری و دیگر سرگرمیاں معطل رہیں۔

Read all Latest kashmir news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from kashmir and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: No let up in braid cutting incidents in Urdu | In Category: کشمیر Kashmir Urdu News

Leave a Reply