میر واعظ عمر فاروق کے حامی عناصرڈی ایس پی کو پیٹ پیٹ کر ہلاک کرنے میں ملوث:ریاستی پولس سربراہ

سری نگر: جموں وکشمیر کے پولیس سربراہ ڈاکٹر ایس پی وید نے کہا کہ سری نگر کی تاریخی جامع مسجد کے باہر ڈپٹی سپرنٹنڈنٹ آف پولیس محمد ایوب پنڈت کے قتل کے واقعہ میں حریت کانفرنس (ع) چیئرمین میرواعظ مولوی عمر فاروق کے حامی ملوث ہیں۔ کیونکہ جس وقت اس ڈی ایس پی کو لوگ ننگا کر کے بری طرح پیٹ رہے تھے تو مسجد کے اندر میر واعظ موجود تھے۔ انہوں نے کہا کہ پیٹ پیٹ کر قتل کے اس واقعہ میں ملوث تین لوگوں کی شناخت کی گئی ہے جن میں سے دو کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔
ڈاکٹر وید نے جمعہ کو یہاں نامہ نگاروں سے بات کرتے ہوئے کہا ’مہلوک ڈپٹی ایس پی کو جامع مسجد کے نذدیک رسائی کنٹرول کی نگرانی کے لئے تعینات کیا گیا تھا۔ کیونکہ مقدس ماہ رمضان کی 27ویں شب ہونے کے باعث ہزاروں لوگ وہاں نماز ادا کرنے اور شب بھر عبادت کرنے کے لئے آئے ہوئے تھے۔ اس کا یہ مقصد تھا کہ غلط عناصر کی وجہ سے لوگوں کو پریشان نہ ہو۔ کسی کو حالات خراب کرنے کا موقع نہ ملے۔ اور لوگ وہاں سکون و آرام سے عبادت میں مشغول رہیں۔ انہوں نے کہا ’یہ ایک مقدس رات تھی اور وہ (ڈپٹی ایس پی) اس رات کو پرسکون رکھنےکے لئے سیکورٹی انتظامات کی نگرانی کررہا تھا۔ اس دوران انہی لوگوں میں سے، جن کی حفاظت کو وہ یقینی بنا رہا تھا،کچھ لوگوں نے اسی کو پتھروں سے مار مار کر ہلاک کر دیا۔ یہ قتل ہے۔ انہوں نے اسے قتل کردیا‘۔
یہ پوچھے جانے پر کہ کیا ڈپٹی ایس پی کو وہاں میرواعظ کی حفاظت پر مامور کیا گیا تھا، پولیس سربراہ نے کہا ’میں نہیں جانتا ہوں۔ مگر ان (میرواعظ) کے ہی لوگ اس قتل میں ملوث ہیں۔ ان لوگوں کو قانون کا سامنا کرنا پڑے گا‘۔ یہ معلوم کے جانے پر کہ کیا ڈی ایس پی ایوب پنڈت وہاں اکیلے تعینات تھے‘ ایس پی وید نے کہا ’معاملے کی تحقیقات ہورہی ہے۔ جو کوئی ملوث ہوگا ، اس کے خلاف قانون کے مطابق کاروائی ہوگی‘۔ انہوں نے کہا نے کہ قتل کے اس واقعہ میں ملوث تین لوگوں کی شناخت کی گئی ہے جن میں سے دو کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا ’ہم نے تین لوگوں کی شناخت کرلی ہے۔ ان میں سے دو کو گرفتار کرلیا ہے۔
تیسرے کی تلاش جاری ہے۔ اور اسے بھی بہت جلد گرفتار کرلیا جائے گا‘۔ جب ڈی جی پولیس کو ایوب پنڈت کی فائرنگ سے تین نوجوانوں کے زخمی ہونے کے بارے میں پوچھے گیا تو ان کا جواب تھا’افسر کے پاس پستول بھی تھا اور اسے اپنے دفاع کا حق حاصل تھا‘۔ قابل ذکر ہے کہ سری نگر کے پائین شہر کے نوہٹہ علاقہ میں واقع تاریخی جامع مسجد کے باہر پولیس افسر کا نوجوانوں کے ایک گروپ کی جانب سے پیٹ پیٹ کر قتل کا واقعہ گذشتہ رات اس وقت پیش آیا جب شب قدر کے سلسلے میں جامع مسجد کے اندر ہزاروں لوگ عبادتوں میں مصروف تھے۔ جبکہ حریت کانفرنس (ع) کے چیئرمین اور متحدہ مجلس علما جموں وکشمیر کے امیر میرواعظ مولوی عمر فاروق بھی اپنے خصوصی وعظ کے سلسلے میں مسجد کے اندر ہی موجود تھے۔

Read all Latest kashmir news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from kashmir and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Mirwaiz was inside jamia masjid when ayub pandith was stripped naked stoned to death by mob in Urdu | In Category: کشمیر Kashmir Urdu News

Leave a Reply