میرواعظ عمر فاروق کی خانہ نظر بندی ختم، تاریخی جامع مسجد میں جمعہ کا خطبہ دیا

سری نگر:کشمیر انتظامیہ نے جمعہ کے روز حریت کانفرنس (ع) چیئرمین میرواعظ مولوی عمر فاروق کی خانہ نظربندی قریب دو ماہ بعد ختم کردی۔ نظربندی ختم کئے جانے کے فوراً بعد میرواعظ پائین شہر کے نوہٹہ میں واقع تاریخی جامع مسجد پہنچے جہاں انہوں نے اپنامعمول کا خطبہ دیا۔ حریت کے ایک ترجمان نے یو این آئی کو بتایا ’میرواعظ کو آج 57 دنوں بعد خانہ نظربندی سے رہا کیا گیا۔ وہ فوراً جامع مسجد پہنچے اور نماز جمعہ کے ایک بڑے اجتماع سے خطاب کیا‘۔
ذرائع نے بتایا کہ جامع مسجد میں نماز کی ادائیگی کے لئے آئے ہوئے لوگ میرواعظ کو مسجد میں دیکھ کر خوش نظر آئے۔ انہوں نے بتایا کہ اگرچہ نوہٹہ میں ایک بار پھر سیکورٹی فورسز کی بھاری جمعیت تعینات کر رکھی گئی تھی، تاہم جامع مارکیٹ کو فورسز کی تعیناتی سے مستثنیٰ رکھا گیا تھا۔ یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ سری نگر کے پائین شہر میں واقع 623 برس قدیم تاریخی و مرکزی جامع مسجد میں ہر جمعہ کو ہزاروں کی تعداد میں لوگ وادی کے مختلف علاقوں سے آکر نماز جمعہ ادا کرتے ہیں۔ میرواعظ جو متحدہ مجلس علماءجموں وکشمیر کے امیر بھی ہیں، خود اس تاریخی مسجد میں جمعہ کا خطبہ پڑھتے ہیں۔
کشمیر انتظامیہ نے امسال 23 جون سے 28 جولائی تک مسلسل چھ جمعوں تک تاریخی جامع مسجد میں نماز جمعہ کی ادائیگی پر پابندی عائد کر رکھی، جو بالآخر 4 اگست کو ختم کردی گئی۔ اس پابندی کی وجہ سے ریاستی حکومت کو شدید تنقید کا نشانہ بننا پڑا تھا۔

Read all Latest kashmir news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from kashmir and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Mirwaiz umar farooq released from house arrest in Urdu | In Category: کشمیر Kashmir Urdu News

Leave a Reply