محبوبہ،میر واعظ اور عمر عبداللہ نے یوم آزادی خطاب میں کشمیر پر مودی کے خیالات کا خیرمقدم کیا

سری نگر: جموں وکشمیر کی وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی ، حریت کانفرنس معتدل کے چیرمین میر واعظ محمد فاروق اور جموں و کشمیر کے سابق وزیر اعلیٰ عمر عبداللہ سمیت کشمیر کی کم و بیش تمام سیاسی پارٹیوں نے یوم آزادی کے موقع پر وزیر اعظم نریندر مودی کے کشمیر سے متعلق دیے گئے بیان کا خیر مقدم کیا۔محترمہ مفتی نے کہا کہ ان کا ہمیشہ سے یقین رہا ہے کہ مسائل کا حل صرف بات چیت اور پر امن ذرائع سے ہی نکالا جاسکتا ہے نہ کہ تشدد سے۔ محبوبہ مفتی نے کہا کہ پارٹی نے 15برس قبل یہ نعرہ ’ بندوق سے نہ گولی سے بات بنے گی بولی سے‘ دیا تھا جو آج بھی اتنی ہی اہمیت کا حامل ہے۔
میر واعظ نے کہا کہ اگر گالیوں اور گولیوں کے بجائے انسانیت اور عدل و انصاف کے ساتھ مسئلہ کشمیر حل کیا جائے تو بلا شبہ یہ حقیقت بن سکتا ہے۔ عمر عبداللہ نے کہا کہ وزیر اعظم کے بیان کا ہر کشمیری نے خیر مقدم کیا ہے لیکن سب کے کان یہ سن سن کر تھک چکے ہیں کیونکہ ان پر عمل نہیں ہوتا۔ واضح رہے کہ وزیر اعظم نے اپنے خطاب میں کہاتھا کہ گولیوں اور گالیوں سے کشمیر کے مسائل کو حل نہیں کیا جاسکتا بلکہ عوام کو شفقت اور محبت سے گلے لگانے کی ضرورت ہے۔

Read all Latest kashmir news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from kashmir and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Mehbooba mir waez and umar abdullah welcome modis kashmir outreach in independence day speech in Urdu | In Category: کشمیر Kashmir Urdu News

Leave a Reply