وادی کشمیر میں زندگی معمول کی جانب گامزن

سری نگر: (یو ا ین آئی) وادی کشمیر میں جہاں علیحدگی پسند قیادت کی اسپانسرڈ ہڑتال بدھ کو 131 ویں دن میں داخل ہوگئی وہیں زندگی بھی رفتہ رفتہ معمول کی جانب گامزن ہے۔
پائین شہر میں واقع تاریخی جامع مسجد کی صورتحال میں کوئی تبدیلی نظر نہیں آرہی ہے جس کے باب الداخلے بدستور مقفل رکھے گئے ہیں۔ وادی کے قرب و جوار میں تقریباً دس ہزار افراد کی گرفتاری کے بعد سنگبازی کے واقعات میں نمایاں کمی واقع ہوئی ہے۔
14 نومبر سے شروع ہوئے دسویں اور بارہویں جماعتوں کے امتحانات میں 95 فیصد طلباءکی شرکت کے باوجود وادی کے تقریباً سبھی تعلیمی اداروں میں تعلیمی سرگرمیاں بدستور معطل ہیں۔ سری نگر اور وادی کے دوسرے علاقوں کی سڑکوں بالخصوص سری نگر جموں قومی شاہراہ پر نجی اور چھوٹی مسافر گاڑیاں بڑی تعداد میں چل رہی ہیں۔
یو این آئی کے ایک نامہ نگار نے جنوبی کشمیر کے پانپور اور سری نگر کے درمیان چھوٹی گاڑیوں کی ایک بڑی تعداد کو چلتے ہوئے دیکھا۔وادی میں عوامی مقامات خاص طور پر سری نگر کے سیول لائنز میں بدھ کو بھی مختلف اشیاء فروخت کررہے چھاپڑی فروشوں کی ایک بڑی تعداد نظر آئی۔ وادی کے کچھ حساس علاقوں کو چھوڑ کر باقی سبھی حصوں میں واقع سرکاری دفاتر اور بینکوں میں معمول کا کام کاج بحال ہوچکا ہے۔

Read all Latest kashmir news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from kashmir and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Life limping back to normal in Urdu | In Category: کشمیر Kashmir Urdu News
Tags:

Leave a Reply