بی ایس ایف کانسٹیبل رمیز پرے کی ہلاکت میں لشکر طیبہ کے دہشت گردوں کا ہاتھ : جموں وکشمیر پولیس

سری نگر: (یو ا ین آئی) جموں وکشمیر پولیس نے کہا ہے کہ شمالی ضلع بانڈی پورہ کے حاجن میں سرحدی حفاظتی فورس (بی ایس ایف) کے اہلکار رمیز احمد پرے کو لشکر طیبہ کے دہشت گردوں نے ہلاک کیا ہے۔ شمالی کشمیر کے ڈپٹی انسپکٹر جنرل آف پولیس نتیش کمار نے جمعرات کی صبح بارہمولہ میں میڈیا کے نمائندوںسے بات کرتے ہوئے کہا کہ بی ایس ایف کانسٹیبل رمیز احمد کو لشکر طیبہ کمانڈر محمود بھائی اور اس کے ساتھیوں نے قتل کیا ہے۔ خیال رہے کہ مشتبہ دہشت گردوں کے ایک گروپ نے گذشتہ رات حاجن میں بی ایس ایف کانسٹیبل کے گھر میں داخل ہوکر اسے ہلاک جبکہ اس کے چار افراد خانہ کو زخمی کردیا۔ راجستھان میں تعینات رمیز احمد چھٹی پر اپنے گھر آیا ہوا تھا۔
نتیش کمار نے رمیز احمد کے قتل میں لشکر طیبہ کے ملوث ہونے کا دعویٰ کرتے ہوئے کہا ’بی ایس کانسٹیبل رمیز پرے کو اپنے گھر کے اندر مارا گیا۔ وہ چھٹی پر گھر آیا ہوا تھا۔ دہشت گردوں کی فائرنگ سے رمیز کے والد اور دیگر تین رشتہ دار شدید طور پر زخمی ہوگئے ہیں‘۔ انہوں نے کہا ’لشکر طیبہ کمانڈر محمود بھائی نے رمیز کو قتل کیا ہے۔ اس کے ساتھ مزید کچھ دہشت گرد بھی تھے‘۔ دریں اثنا نیشنل کانفرنس کے کارگذار صدر نے رمیز پرے کی ہلاکت کو ’مکروہ فعل‘ قرار دیا ہے۔ انہوں نے مائیکرو بلاگنگ کی ویب سائٹ ٹویٹر پر ایک ٹویٹ میں لکھا ’یہ ایک خوفناک واقعہ ہے۔ یہ مکروہ فعل ہے۔ میری دلی ہمدردیاں رمیز پرے کے کنبے کے ساتھ ہیں۔
امید کرتا ہوں کہ زخمی افراد بہت جلد صحت یاب ہوں گے‘۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ چار مشتبہ انتہا پسندوں پر مشتمل ایک گروپ گذشتہ رات حاجن میں رمیز پرے کے گھر میں داخل ہوا۔ انہوں نے بتایا ’جب دہشت گردوں نے رمیز کو اغوا کرکے اپنے ساتھ لے جانے کی کوشش کی تو اس کے افراد خانہ نے مزاحمت کی‘۔ ذرائع نے بتایا ’اس کے بعد دہشت گردوں نے اندھا دھند فائرنگ کی جس کے نتیجے میں پرے کی موقع پر موت واقع ہوئی جبکہ اس کے کنبے کے چار اراکین زخمی ہوگئے‘۔ انہوں نے بتایا کہ سبھی زخمیوں کو سری نگر کے شیر کشمیر انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز میں داخل کرایا گیا ہے جہاں ایک خاتون کی حالت تشویشناک بنی ہوئی ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ جنگجو فائرنگ کرنے کے بعد فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے۔

Title: lashkar e taiba terrorists behind bsf constable parrays killing | In Category: کشمیر  ( kashmir )

Leave a Reply