جموں و کشمیر کے کشتواڑ ضلع کے کرفیو میں چار گھنٹے کی تخفیف

جموں:جموں وکشمیر کے ضلع کشتواڑ میں منگل کو کرفیو میں 4 گھنٹے کی ڈھیل دی گئی۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ صورتحال میں بہتری آنے کے بعد کرفیو میں دوپہر دو بجے سے شام چار بجے تک ڈھیل دی گئی۔ تاہم ائمہ مساجد اور دیگر شہریوں کی گرفتاری کے خلاف جامع مسجد کشتواڑ کے امام فاروق احمد کچلوکی اپیل پر قصبہ کشتواڑ میں مکمل ہڑتال رہی۔
ڈوڈہ، کشتواڑ اور رام بن رینج کے ڈپٹی انسپکٹر جنرل آف پولیس نثار احمد خان نے یو این آئی کو بتایا کہ تاحال کسی بھی علاقے سے تازہ جھڑپوں یا تشددکی کوئی اطلاع موصول نہیں ہوئی اور قصبہ کی صورتحال پرامن اور معمول پر ہے۔ ڈی آئی جی نے بتایا کہ صورتحال کی نگرانی کی جارہی ہے اورصورتحال کا جائزہ لینے کے بعد کرفیو میں ڈھیل دی جائے گی۔ مسٹر خان نے بتایا کہپیر کو بھی کرفیو میں دو گھنٹے کی نرمی دی گئی جس دوران وہاں کی صورتحال پرامن ہی رہی۔ موصولہ اطلاعات کے مطابق اگرچہ کرفیو میں ڈھیل دی گئی، لیکن باوجود اس کے قصبہ میں بیشتر دکانیں اور تجارتی مراکز بند ہی رہے۔
ضلع میں اتوار کو تین افراد بشمول دو ائمہ مساجد کی گرفتاری کے بعد احتجاجی مظاہرین اور سیکورٹی فورسز کے مابین جھڑپیں بھڑک اٹھی تھیں جس کے بعد ضلع میں کرفیو نافذ کیا گیا تھا۔ ان تین افراد بشمول ائمہ مساجد کو مبینہ طور پر عیدالاضحی کے دن ہندوستان مخالف اور کشمیر کی آزادی کے حق میں نعرے لگانے کی پاداش میں گرفتار کیا گیا تھا۔ ان پر مبینہ طور پر پبلک سیفٹی ایکٹ (پی ایس اے) کا اطلاق کیا گیا ہے جس کے تحت انہیں کم از کم تین ماہ تک جیل میں مقید رکھا جائے گا۔ پولیس نے بتایا کہ تین افراد بشمول دو ائمہ مساجد عبدالقیوم متو، سیف الدین باغوان اور فردوش احمد باغوان کو شبانہ چھاپوں کے دوران حراست میں لیا گیا تھاجس کے بعد کچھ لوگ سڑکوں پر نکل آئے تھے۔

Read all Latest kashmir news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from kashmir and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Kishtwar admin announces 4 hour relaxation in curfew in Urdu | In Category: کشمیر Kashmir Urdu News

Leave a Reply