میر واعظ عمر فاروق اور یٰسین ملک نے کشمیر میں مکمل ہڑتال کی کال دی

سری نگر: کشمیری علیحدگی پسند قیادت سید علی گیلانی، میرواعظ مولوی عمر فاروق اور محمد یاسین ملک نے جنوبی کشمیر میں مسلح تصادم کے بعد احتجاجی مظاہروں کے دوران ایک نوجوان کی ہلاکت اور درجنوں دیگر کے زخمی ہو جانے کے خلاف بدھ کو پورے کشمیر میں ہڑتال کی کال دے دی ہے۔ انہوں نے نہتے کشمیریوں کی ہلاکت کو ریاستی دہشت گردی کا بدترین مظاہرہ قرار دیا ہے۔
مسٹر گیلانی، میرواعظ اور یاسین ملک نے منگل کی شام یہاں جاری ایک بیان میں کہا ’ جنوبی کشمیر کے پلوامہ ، شوپیاں ، کاکا پورہ اور دیگر علاقوں میں نہتے مظاہرین کے خلاف جس طرح سرکاری فورسز نے بندوقوں کے دہانے کھول دیے جس کے نتیجے میں ایک عام شہری فردوس احمد خان ساکنہ کاکا پورہ شہید اور چالیس کے قریب مظاہرین شدید زخمی ہوئے، پلوامہ ہسپتال کے اندر گھس کر مریضوں اور طبی عملے پر فائرنگ کی اور کارڈن اینڈ سرچ آپریشن کی آڑ میں نہتے لوگوں کو شدید تشدد کا نشانہ بنایا، متعدد مقامات پر طلبا پر لاٹھی چارج اور آنسو گیس کے گولے استعمال کیے گئے اس سے لگتا ہے کہ حکمرانوں نے سرکاری فورسز اور پولیس کو یہاں لوگوں کو مارنے اور تشدد ڈھانے کا لائسنس دیا ہوا ہے‘۔

Read all Latest kashmir news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from kashmir and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Kashmiri separatists call for total strike over civilian death in Urdu | In Category: کشمیر Kashmir Urdu News

Leave a Reply