میر واعظ عمر فاروق اور جے کے ایل ایف لیڈر یٰسین ملک گرفتار

سری نگر: جموں و کشمیر پولس نے بدھ کے روز علیحدگی پسند لیڈروں میر وعظ عمر فاروق اور محمد یٰسین ملک کو احتیاطی تدابیر کے طور پر حراست میں لے کر ان دونوں کی قیادت میں ایک مشترکہ مارچ کو ناکام بنا دیا۔ان دونون کی قیادت میں جیسے ہی مارچ شروع ہوا اور مارچ میں شامل لوگوں نے جموں و کشمیر لبریشن فرنٹ (جے کےایل ایف) کے آبی گذر دفتر سے وسطی لال چوک کی جانببڑھنا شروع کیاپولس نے ان دونوں لیڈروں کو گرفتار کر لیا۔
مارچ شروع ہونے سے پہلے دونوں لیڈروں نے جے کے ایل ایف کے دفتر کے باہر ایک مشترکہ پریس کانفرنس کی ۔اس میں فاروق نے کہاکہ جنوبی کشمیر میں انتہا پسندون کے خلاف کارروائیوں کے نام پر سلامتی دستوں کے ہاتھوں لوگوں کو متواتر ہراساں کرنے کا سلسلہ جاری ہے جو نہایت قابل مذمت ہے۔ان دونوں نے وادی کشمیر سے باہر جیلوں میں قید کشمیریوں کی حالت زار کا معاملہ بھی اٹھایا۔ان دونوں لیڈروں نے جیلوں میں بند کشمیریوں کے ساتھ اظہار وابستگی کرنے کے لیے 27نومبر کو وادی میںعام ہڑتال کا اعلان کیا۔

Title: kashmiri separatist leaders mirwaiz umer farooq muhammad yasin malik arrested | In Category: کشمیر  ( kashmir )

Leave a Reply