جموں کشمیر کا تشخص دفعہ 35 اے کی بدولت محفوظ،یہ منسوخ ہوئی تو نسلیں ہمیں معاف نہیں کریں گی: فاروق عبداللہ

سری نگر: نیشنل کانفرنس کے صدر اور ممبر پارلیمنٹ ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے کہا ہے کہ جموں وکشمیر کی منفرد شناخت ابھی تک آئین ہند کی دفعات 35 اے اور 370 کی بدولت محفوظ ہے اور اگر ان دفعات کو آئین ہند سے منسوخ کیا گیا تو آنے والی نسلیں ہمیں کبھی معاف نہیں کریں گی۔ انہوں نے کہا کہ یہ دفعات جموں وکشمیر کی پہچان، الگ آئین اور الگ جھنڈے کو تحفظ فراہم کرتی ہیں اور ان دفعات کا محافظ بن کر دفاع کرنا اہلیان جموں وکشمیر کا فرض ہے۔
فاروق عبداللہ نے پیر کے روز یہاں اپنی رہائش گاہ پر وادی کے مختلف اضلاع سے آئے ہوئے پارٹی عہدیداروں اور کارکنان کے ساتھ تبادلہ خیال کرتے ہوئے کہا ’اپنے مادرِ وطن جموں وکشمیر کے تشخص، انفرادیت اور شناخت کے تحفظ کے لئے ریاست کے ہر ایک پشتینی باشندے کو اتحاد و اتفاق سے کام لینے کی ضرورت کے ساتھ ساتھ دفعہ 35 اے اور دفعہ370کے خلاف ہورہی سازشوں کا ڈٹ کر مقابلہ کرنے کے لئے آگے آنا چاہئے‘۔ انہوں نے کہا کہ دفعہ 35 اے اور 370سے ہی آج تک جموں وکشمیر کی شناخت قائم ہے اور ان کے نہ رہنے سے ہمارا وجود ختم ہوجائے گا اور ہماری تہدیب و تمدن کا کہیں نام و نشان باقی نہیں رہے گا، جس کے لئے آنے والے نسلیں ہمیں معاف نہیں کریں گی۔

Read all Latest kashmir news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from kashmir and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Kashmiri people will stand up against article 35 a says farooq abdullah in Urdu | In Category: کشمیر Kashmir Urdu News

Leave a Reply