کشمیر میں ایک اور نوجوان سلامتی دستوں کی فائرنگ میںہلاک

سری نگر: گذشتہ شب جموں و کشمیر کے وزیر تعلیم اور حکومتی ترجمان نعیم اختر کی رہائش گاہ پر پیٹرول بموں سے حملہ کر دیا گیا اور دوسری جانب سلامتی دستوں کی فائرنگ میں ایک اورنوجوان ہلاک اور ایک دیگر زخمی ہوگیا۔
اس تازہ ہلاکت سےجولائی سے اب تک احتجاج کے دوران ہلاک شدگان کی تعداد52ہوگئی ہے جب کہ 3500 افراد زخمی ہیں۔ حزب المجاہدین کے کمانڈر برہان وانی اور دو دیگر جنگجوؤں کی وادی کشمیر میں ہلاکت کے بعد سے وہاں بڑے پیمانے پر مظاہروں کا سلسلہ جاری ہے۔ دریں اثنا میں وادی بھر میں ہوئی جھڑپوں میں دو پولیس والے بھی ہلاک ہوگئے ہیں او رتین ہزار سیکورٹی والے زخمی ہوئے ہیں۔
دور لیتھ پورہ میں سری نگر۔جموں قومی شاہراہ پر راستہ جام کردیا۔ یہ لوگ سلامتی دستوں کے خلاف احتجاج کررہے تھے۔ ان کا الزام ہے کہ وہ گھروں میں داخل ہوکر لوگوں کو پیٹ رہے ہیں۔ انہوں نے کل شام گھروں میں داخل ہوکر املاک کو بھی نقصان پہنچایا ہے۔ کھڑکیاں توڑی ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ جب مظاہرے ہورہے تھے۔تب ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر (رام بن) نے علاقہ پار کرنے کی کوشش کی جس سے جھڑپیں شروع ہوگئیں۔
اے ڈی سی کے ایک محافظ نے گولی چلادی جس سے تین افراد زخمی ہوگئے۔ ایک نوجوان فاروق احمد کوچے زخموں کی تاب نہ لاکر چل بسا جب کہ دوسرا شیر کشمیر اسپتال میں ہے اور اس کی بھی حالت نازک ہے۔ قریب100لوگ پیلٹ لگنے سے زخمی ہیں۔ متعدد لوگوں کی ایک یا دونوں آنکھوں کی روشنی چلی گئی ہے۔وادی میں موبائل انٹرنیٹ اور ریلوے خدمات بند ہیں۔

Read all Latest kashmir news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from kashmir and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Kashmir unrest ministers house attacked one more killed in Urdu | In Category: کشمیر Kashmir Urdu News

Leave a Reply