سبزار کی ہلاکت کے خلاف احتجاج میں کشمیر میں دوسرے روز بھی ہڑتال رہی

سری نگر: وادی کشمیر کے دارالخلافہ سری نگر کے پائین شہر اور مختلف ضلعی ہیڈکوارٹروں میں انتظامیہ کی جانب سے عائد کردہ کرفیو جیسی پابندیاں منگل کو مسلسل دوسرے روز بھی جاری رہیں۔ وادی میں 27 مئی کو جنوبی ضلع پلوامہ میں سیکورٹی فورسز کے ساتھ جھڑپ میں حزب المجاہدین کے معروف کمانڈر سبزار احمد بٹ کے سمیت دو انتہا پسندوں کی ہلاکت کے ساتھ احتجاجیوں اور سیکورٹی فورسز کے مابین جھڑپوں کا نیا سلسلہ شروع ہونے کے بعد مختلف حصوں میں سخت ترین کرفیو یا دفعہ 144 سی آر پی سی کے تحت چار یا اس سے زیادہ افراد کے ایک جگہ جمع ہونے پر پابندی عائد کی گئی۔
اس دوران وادی میں دو انتہا پسندوںاور ایک راہگیرکی ہلاکت کے خلاف آج مسلسل دوسرے دن بھی مکمل ہڑتال رہی۔ خیال رہے کہ کشمیری علیحدگی پسند قیادت سید علی گیلانی، میرواعظ مولوی عمر فاروق اور محمد یاسین ملک نے ترال تصادم کے دوران دوجنگجوؤں کے سمیت 3 افراد کی ہلاکت اور سیکورٹی فورسز کی جانب سے وادی کے مختلف علاقوں میں شہریوں کے خلاف طاقت کا بے تحاشا استعمال کرنے اور سینکڑوں کو زخمی کرنے کے خلاف 28 اور 29 مئی اتوار و سوموار کو پوری ریاست میں ہڑتال کرنے اورعسکریت پسندوں کو خراج پیش کرنے کے لیے 30مئی منگل کو ترال میں مہلوکین کی یاد میں ایک عظیم الشان تعزیتی جلسہ منعقد کرانے کی کال دے رکھی ہے۔

Read all Latest kashmir news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from kashmir and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Kashmir remained tense but under control in Urdu | In Category: کشمیر Kashmir Urdu News

Leave a Reply