جموں و کشمیر کی وزیر اعلیٰ محبوبہ نے ریاست کے مفتی اعظم کے بیان کی مذمت کی

سری نگر : جموں و کشمیر کی وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی نے کہا ہے کہ وہ ایسے بیان کی سخت مذمت کرتی ہیں جس میں مسلمانوں سے کہا گیا ہے کہ وہ علیحدہ ریاست کا مطالبہ کریں۔
محبوبہ نے کہا کہ جموں و کشمیر تقسیم ہند کے وقت نہ تو ایک فریق تھا اور نہ ہی ہم مذہبی خطوط پر تقسیم کی حمایت کرتے ہیں۔ اگرچہ محبوبہ نے کسی کا نام نہیں لیا ہے لیکن ان کا اشارہ واضح طور پر نائب مفتی اعظم ناصر الاسلام کی جانب تھا جنہوںنے منگل کے روز اپنے بیان میں کہا تھا کہ ہندوستان میں عدم رواداری بڑھتی جارہی ہے اور یہی وقت ہے کہ ہندوستانی مسلمان ایک علیحدہ ملک کا مطالبہ کریں۔
شوپیان میں فوج کے ہاتھوں حال ہی میںتین افراد کی ہلاکت پر ردعمل ظاہرکرتے ہوئے انہوں نے کہا تھا کہ ہندوستان ” قابض“ ہے۔ انہوں نے یہ بھی کہا تھا کہ ہندوستان نے کشمیر پر زبردستی اپنا تسلط قائم کر رکھا ہے او راسے ریاست سے جانا پڑے گا۔

Read all Latest kashmir news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from kashmir and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Jk was not a party to partition nor did we support division on religious lines tweets mehbooba in Urdu | In Category: کشمیر Kashmir Urdu News

Leave a Reply