ہندوستان کے جنگی جنون کا مقصد کشمیر میں عوامی بغاوت سے نپٹنے میں ناکامی سے توجہ ہٹانا مقصود ہے: انجینئر رشید

سری نگر: (یو ا ین آئی) عوامی اتحاد پارٹی کے سربراہ اور ممبر اسمبلی لنگیٹ (شمالی کشمیر) انجینئر شیخ عبدالرشید نے ہندوستان کے اس دعوے کہ اس نے پاکستان کے زیر قبضہ کشمیر میں عسکریت پسندوں کے کیمپوں پر حملہ کیا ہے، پر اپنا رد عمل ظاہر کرتے ہوئے الزام لگایا ہے کہ ہندوستان جو کچھ بھی بول رہا ہے یا کر رہا ہے اس کی واحد وجہ جموں کشمیر میں عوامی بغاوت سے نپٹنے میں ناکامی سے عالمی برادری کی توجہ ہٹانا مقصود ہے۔
اپنے ایک بیان میں انجینئر رشید نے کہا ’ جنگ اگرچہ کسی بھی مسلئے کا ہرگز حل نہیں لیکن کشمیریوں کو اس بات میں کوئی خاص دلچسپی نہیں کہ ہندوستان پاکستان اگر واقعی ایک دوسرے کے ساتھ نبرد آزما ہوتے ہیں کیونکہ گذشتہ کئی دہائیوں سے با العموم اور تین ماہ سے بالخصوص کشمیر کی ہر بستی جنگ کا سماں پیش کررہی ہے۔فرق صرف یہ ہے کہ کشمیریوں پر ہونے والی قیامت خیز تباہیوں کو ہندوستان بہت حد تک باہر کی دنیا سے چھپا رہا ہے اور کشمیریوں کے اوپر مظالم کو کبھی امن و قانون تو کبھی قوم پرستی کے تابوت میں دفن کیا جاتا ہے۔ لیکن اس کے باوجود بھی جتنی انسانیت سوزمعلومات باہر کی دنیا تک کسی نہ کسی صورت میں پہنچ جاتی ہے اس سے نہ صرف عالمی برادری نے نیو یارک سے جنیوا تک اور او آئی سی سے چین تک اس بات کے لئے مجبور ہو گئے ہیں کہ وہ ہندوستان کی سرکار کو کبھی براہ راست تو کبھی در پر دہ کشمیریوں کے لئے حق خود ارادیت تسلیم کرنے کے لئے دباو ڈالیں۔ راجناتھ سنگھ سے لیکر نریندر مودی تک کی کشمیریوں کو حالات سدھارنے کی خاطر دی جانے والی دھمکیوں اور ڈیڈ لائنوں کا حشر دیکھ کر ہندوستان کی سرکار کے پاس جنگی ماحول کھڑا کرنے کے سوا کوئی چارہ نہیں رہا اور دلی کو یہ امید ہے کہ سرحدوں پر تناو کھڑا کرکے نہ صرف کشمیریوں کی توجہ بغاوت سے ہٹائی جا سکتی ہے بلکہ عالمی برادری کے دباو سے بھی بچا جا سکتا ہے۔
تاہم ایسی سوچ میں ہندوستان کو جلد یا دیر تبدیلی لانی ہوگی اور سمجھنا ہوگا کہ تمام مسائل کا حل جنگ کے بجائے کشمیریوں کو رائے شماری دینے میں مضمر ہے‘۔ انجینئر رشید نے مزید کہا ’ان خوش فہم لوگوں کی ساری خوش فہمیاں دور ہو جانی چاہیے جنہیں کبھی کانگریس اور دیگر جماعتیں کم ظرر رساں نظر آتی تھیں۔ جس طرح سونیا گاندھی ، راہل گاندھی، نتیش کمار، سیتا رام یچوری ، اروند کیجریوال ، اسد الدین اویسی،ملائم سنگھ یادو اور سکیولرازم کے دیگر ٹھیکے داروں نے مبینہ حملوں کے حوالے سے مودی کو مبارک باد دی اور ان کی پیٹھ تھپتھپائی اس سے پوری دنیا کو سمجھ لینا چاہیے کہ پاکستان اور کشمیریوں کی نفرت کو لیکر سارا ہندوستان ایک ہی ہے۔
حد تو یہ ہے کہ جہاں غلام نبی آزاد اور سونیا گاندھی نے مرکزی سرکار کی تعریف کی اور مکمل تعاون کا یقین دلایا وہاں ریاستی کانگریس کے صدر جی اے میر نے جنگ کی مخالفت کی۔ اس سے ثابت ہوتا ہے کہ ان جماعتوں کو اپنا اپنا ووٹ بینک بچانے کے سوا کسی چیز کی فکر نہیں۔ اسی طرح جہاں محبوبہ مفتی نے سری نگر میں جنگ سے بچنے کی بات کی وہاں انہی کی پارٹی کے ترجمان نے جموں میں نہ صرف پاکستان کو خوب گالیاں سنوائیں بلکہ مودی کی شان میں کافی قصیدے بھی پڑھے‘۔’ انجینئر رشید نے ریاست کی تمام سیاسی قوتوں پر زور دیا کہ وہ حالات کی سنگینیت کو سمجھنے میں مزید وقت ضایع نہ کریں اور دلی کو صاف صاف بتا دیں کہ انہیں جموں کشمیر کو ہندوستانی سیاست کے لئے اکھاڑہ بنانے سے دریغ کرنا چاہیے۔

Read all Latest kashmir news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from kashmir and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Jk mla engineer rashid in Urdu | In Category: کشمیر Kashmir Urdu News

Leave a Reply