سرحد پر پاکستانی فائرنگ میں 4 شہری زخمی، 700سے زائد محفوظ مقامات پر منتقل

جموں: (یو ا ین آئی) جموں وکشمیر کے ضلع جموں میں بین الاقوامی سرحد کے ارنیہ، آر ایس پورہ اور رام گڑھ سیکٹروں میں ہندو پاک افواج کے مابین گولہ باری کا تبادلہ جمعہ کو مسلسل دوسرے دن بھی جاری رہا۔ پاکستانی فائرنگ کے نتیجے میں 4 عام شہری زخمی جبکہ مال مویشیوں کو بڑے پیمانے پر نقصان پہنچا ہے۔ مسلسل گولہ باری کے پیش نظر 727 سرحدی دیہاتیوں کو محفوظ مقامات پر منتقل کیا گیا ہے۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ بین الاقوامی سرحد کے ارنیہ، آر ایس پورہ اور رام گڑھ سیکٹروں میں گذشتہ نصف شب کو سرحد پار پاکستانی رینجرز کی جانب سے ایک بار پھر بلااشتعال فائرنگ کی گئی۔ انہوں نے بتایا ’ پاکستانی کی طرف سے شدید فائرنگ کا سلسلہ جمعہ کی صبح تک جاری رہا‘۔
ذرائع نے بتایا کہ بین الاقوامی سرحد پر تعینات فوجی اہلکار سرحد پار سے ہونے والی جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزیوں کا موثر جواب دے رہے ہیں۔ جموں وکشمیر پولیس نے اپنے آفیشل ٹویٹر اکاؤنٹ پر جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزیوں کی تفصیلات ظاہر کرتے ہوئے کہا ’پاکستان کی طرف سے ارنیہ، آر ایس پورہ اور رام گڑھ میں جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کی گئی۔ پاکستانی فائرنگ کے نتیجے میں 4 عام شہری زخمی، 6 مویشی ہلاک جبکہ 34 دیگر زخمی ہوگئے ہیں۔ فائرنگ سے 2 رہائشی مکانات کو نقصان پہنچا ہے‘۔ پولیس نے مزید کہا کہ گولہ باری کے پیش نظر 727 سرحدی دیہات کو محفوظ مقامات پر منتقل کیا گیا ہے۔

Read all Latest kashmir news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from kashmir and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: jammu and kashmir pakistan violates ceasefire along border four civilians injured over 700 relocated in Urdu | In Category: کشمیر  ( kashmir ) Urdu News

Leave a Reply