وزیر دفاع کے بعد فوجی سربراہ جنرل راوت نے وادی کشمیر کا دورہ کیا

سری نگر: مرکزی وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ کے دورہ جموں و کشمیر کے ایک روز بعد فوجی سربراہ جنرل بپن راوت بھی جمعہ کو وادی کشمیر کی صورت حال کا جائزہ لینے کے لیے مرکزی علاقہ جموں و کشمیر کے دارلخلافہ سری نگر پہنچے ۔

جموں و کشمیر کو خصوصی درجہ دینے والی دفعہ370کے خاتمہ کے بعد وزیر داخلہ اور فوجی سربراہ کا یہ پہلا دورہ جموں و کشمیر ہے۔ وزیر دفاع نے اپنے دورہ لیہہ کے دوران پاکستان کو یہ سخت پیغام دیا کہ کشمیر ہمیشہ سے ہندوستان کا حصہ ہے اور رہے گا۔

اس معاملہ میں پاکستان کو مداخلت کا کوئی حق حاصل نہیں ہے۔انہوں نے کہا کہ ہندوستان جموں و کشمیر پر اپنے موقف پر سختی کے ساتھ اٹل ہے اور اصل حقیقت یہی ہے کہ بین الاقوامی برادری نے اس معاملہ سے کنارہ کشی کر کے پاکستان کو واضح پیغام دے دیا کہ یہ ہندوستان کا داخلی معاملہ ہے۔

نیز اس معاملہ پر پاکستان تنہا ہے۔اور اس معاملہ میں دنیا کا کوئی ملک اس کے ساتھ نہیں ہے۔ وزیر دفاع نے کہا وہ پاکستان سے پوچھنا چاہتے ہیں کہ کشمیر پاکستان کا کب ہو گیا۔کشمیر ہمیشہ سے ہی ہندوستان کا ایک حصہ ہے ۔

ہمارا ہے اور ہمیشہ ہمارا ہی رہے گا۔وزیر دفاع نے مزید کہا کہ یہ تو پاکستان ہے جس نے قبوضہ کشمیر اورگلگت و بلتستان پر ناجائز قبضہ کر رکھا ہے۔جبکہ سچائی یہی ہے کہ پی او کے اور گلگت بلتستان پر پاکستان نے ناجائز طور پر قبضہ کر رکھا ہے۔

Read all Latest kashmir news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from kashmir and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Indian army chief general bipin rawat visits jammu and kashmir to assess security and preparedness in Urdu | In Category: کشمیر Kashmir Urdu News
What do you think? Write Your Comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.