کشمیر میں عورتوں کی چوٹی کٹنے کے بڑھتے واقعات پر حریت کانفرنس کا اظہار تشویش

سری نگر: (یو ا ین آئی) وادی کشمیر میں بزرگ علیحدگی پسند رہنما سید علی گیلانی کی قیادت والی حریت کانفرنس نے خواتین کی جبری بال تراشی کے بڑھتے واقعات پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اب خوف ودہشت میں اضافہ پیدا کرنے کے لیے گھروں میں شبانہ پتھراؤ اور ڈاکہ زنی بھی ہورہی ہے اور حکمرانوں کا یہ حیران کن طرز عمل ہے کہ متاثرہ خواتین کے مختلف ٹیسٹ کرائے جائیں گے۔
ترجمان نے کہا کہ متاثرہ خواتین پہلے ہی ذہنی وقلبی پریشانیوں میں مبتلا ہوچکی ہوتی ہیں دوسری طرف مختلف بیانات اور ٹیسٹس لینے سے نہ صرف ان کی توہین ہوگی، بلکہ ایسا کرکے مجرمین کے کرتوتوں پر پردہ ڈالنے کی مذموم کوشش ہوگی، جس کی ہم شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہیں۔
حریت کے ایک ترجمان نے کہا کہ ایک ماہ گزرنے کے بعد اب حکمران کہہ رہے ہیں کہ بال تراشیوں کا سراغ مل جائے گا اور لوگوں کو تعان کرنا چاہیے۔ لوگ تو پریشان حال ہوکر دن رات اپنے محلہ اور بستیوں کا گشت لگاکر مجرمین کی تلاش میں پھررہے ہیں، لیکن لوگوں کا کہنا ہے کہ پولیس موقعہ واردات پر اچانک پہنچ کر مجرمین کو چھڑا کر لے جاتی ہے اور انہیں بے قصور قرار دیا جاتا ہے۔

Read all Latest kashmir news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from kashmir and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Hurriya conference express serious concern over the increasing of braid cutting in Urdu | In Category: کشمیر Kashmir Urdu News

Leave a Reply